پی ٹی آئی نے قومی اسمبلی میں استعفوں کی مرحلہ وار منظوری عدالت میں  چیلنج کر دی

پی ٹی آئی نے قومی اسمبلی میں استعفوں کی مرحلہ وار منظوری عدالت میں  چیلنج کر ...
پی ٹی آئی نے قومی اسمبلی میں استعفوں کی مرحلہ وار منظوری عدالت میں  چیلنج کر دی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)  پاکستان تحریک انصاف نے قومی اسمبلی میں استعفوں کی مرحلہ وار منظوری کو عدالت میں چیلنج کر دیا ۔

پاکستان تحریک انصاف  کے سیکرٹری جنرل  اسد عمر  اسلام آباد ہائیکورٹ پہنچےجہاں انہوں نے ارکان اسمبلی کے استعفوں کی مرحلہ وار منظوری کے اقدام کو چیلنج کیا۔

میڈیا سے گفتگو میں اسد عمر نے کہا کہ 11 بندوں کے جو استعفے منظور کرنے کا تماشہ لگایا گیا ہے اس کے خلاف ہم عدالت آئے ہیں ،  11 اپریل کو اسمبلی فلور پر ہمارے  125 لوگوں نے کہا کہ ہم نے استعفے دیدیے ہیں ،  الیکشن کمیشن نے مرضی کے  11 استعفے منظور کئے ، الیکشن کمیشن کی جانب سے غیرقانونی کام کیا گیا ہے۔

رہنما پی ٹی آئی نے الزام عائد کیا کہ   الیکشن کمیشن سیاسی فریق  اور  ادارہ پی ڈی ایم کا حصہ بن گیا ہے ہم اس کے خلاف ریفرنس دائرکرنے جارہے ہیں۔

خیال رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے  11 ارکان قومی اسمبلی کے استعفے منظور کئے جا چکے ہیں جن میں  علی محمد خان ، فرخ حبیب ، شیریں مزاری ،  فضل محمد خان  شوکت علی، فخر زمان خان،  اعجاز شاہ، جمیل احمد خان، اکرم چیمہ ،  شاندانہ گلزار اور عبدالشکور شاد شامل ہیں۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -