لاکھوں روپے نقدی کیساتھ تین اراکین اسمبلی گرفتار، بھارتی عدالت میں پیش کردیاگیا

لاکھوں روپے نقدی کیساتھ تین اراکین اسمبلی گرفتار، بھارتی عدالت میں پیش ...
لاکھوں روپے نقدی کیساتھ تین اراکین اسمبلی گرفتار، بھارتی عدالت میں پیش کردیاگیا

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی ریاست مغربی بنگال میں 50لاکھ روپے کیش کے ساتھ تین اراکین اسمبلی کو گرفتار کیاگیا جنہیں بعد میں عدالت میں پیش کر دیا گیا۔ انڈیا ٹوڈے کے مطابق مغربی بنگال میں پولیس نے 5لوگوں کو گرفتار کیا ہے جن کا تعلق ریاست جھاڑ کھنڈ سے ہے۔ ان میں تین جھاڑکھنڈ اسمبلی میں کانگریس کے ٹکٹ پر منتخب ہونے والے اراکین، ایک ڈرائیور اور ایک اسسٹنٹ شامل ہیں۔

گرفتار ہونے والے ایم ایل ایز کے نام عرفان انصاری، راجیش کیشپ اور نیمن بکسل کونگری بتائے گئے ہیں۔یہ لوگ ریناہٹی کے قریب نیشنل ہائی وے 16پر سفر کر رہے تھے جب انہیں پولیس نے روکا اور گاڑی کی تلاشی لی۔پولیس کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ ان اراکین اسمبلی کی گاڑی سے 48سے 50لاکھ روپے تک کیش برآمد ہوا ہے۔ پولیس کی طرف سے برآمد ہونے والی رقم کا حتمی عدد نہیں بتایا گیا۔

 رپورٹ کے مطابق پولیس نے گرفتار ایم ایل ایز کو مغربی بنگال کے دوسرے بڑے شہر ہاوڑا کی ایک عدالت میں پیش کر دیا ہے۔کانگریس جھاڑ کھنڈ کے رہنما راجیش ٹھاکر کا ان گرفتاریوں پر کہنا ہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی دو سال سے جھاڑ کھنڈ میں کانگریس کی حکومت گرانے کی کوشش میں لگی ہوئی ہے اور کانگریسی ایم ایل ایز کی گرفتاری بھارتیہ جنتا پارٹی کی اسی کوشش کا حصہ ہے۔ 

مزید :

بین الاقوامی -