دنیا مغرب کی دو غلی پالیسی کا خمیازہ بھگت رہی ہے ،ایرانی سپریم لیڈر

دنیا مغرب کی دو غلی پالیسی کا خمیازہ بھگت رہی ہے ،ایرانی سپریم لیڈر

  

تہران (اے پی پی) ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای نے مغرب کے دوہرے معیار کو ایک بار پھر کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے اور کہا ہے کہ مغربی ملکوں کے خلاف دنیا بھر میں پائی جانے والی نفرت ان ملکوں کی دوغلی پالیسیوں کا شاخسانہ ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ طالبان اور القاعدہ امریکا کی پیداوار ہیں۔ ایرانی زرائع ابلاغ کے مطابق انہوں نے یورپ اور شمالی امریکا کے نوجوانوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ مغرب دوغلی پالیسیوں کی وجہ سے نفرت کا سامنا کر رہا ہے۔ انہوں نے فرانس میں 13 نومبر کو ہونے والے حملوں کی مذمت کرتے ہوئے انہیں دہشت گردی قرار دیا۔اْنہوں نے مغرب کے نوجوانوں سے کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ فرانس میں دہشت گردی کے المناک واقعات نے مجھے آپ سے ایک بار پھر مخاطب ہونے کا موقع دیا ہے۔ میرا ایمان کے کہ آپ نوجوان ہیں اور مصیبتوں سے سبق سیکھنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ ہر وہ شخص جو محبت اور انسانی ہمدردی کے جذبات رکھتا ہو پیرس دہشت گردی جیسے واقعات سے ضرور متاثر ہوا ہے چاہے دہشت گردی فرانس میں ہو یا فلسطین میں، عراق میں ہو یا لبنان اور شام میں ہو، کوئی زندہ ضمیر انسان اس سے متاثر ہوئے بغیر نہیں رہ سکتا۔

مزید :

عالمی منظر -