پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی نہ کرکے حکومت نے تاجروں اور عوام کو مایوس کیا ،نعیم میر

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی نہ کرکے حکومت نے تاجروں اور عوام کو مایوس ...

  

لاہور(کامرس رپورٹر)آل پاکستان انجمن تاجران کے مرکزی جنرل سیکرٹری نعیم میر نے کہا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی نہ کرکے حکومت نے تاجروں اور عوام کو مایوس کیا ہے۔ پٹرولیم مصنوعات اور پٹرول کی قیمت اس وقت 115ڈالر سے کم ہوکر46ڈالرتک پہنچ چکی ہیں۔ ان قیمتوں کی کمی سے ناصرف مہنگائی کی شرح میں کمی آئی ہے بلکہ حکومت کے امپورٹ بل میں بھی نمایاں کمی آئی ہے۔ حکومت کو صرف پٹرولیم مصنوعات کی مد میں امپورٹ کی مد میں ساڑھے سات بلین ڈالرسالانہ فائدہ ہوا ہے۔ آج حکومت کے پاس غیر ملکی زرمبادلہ 20بلین ڈالر تک پہنچ چکے ہیں۔ یعنی 20ارب کی موجودگی اور پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں نمایاں کمی کے اثرات عوام الناس تک نہ پہنچنا انتہائی مایوس کن بات ہے۔ یقیناًحکومت پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کومنافع کا ذریعہ بنارہی ہے جو غلط ہے۔ ہم سمجھتے ہیں کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں بالکل اسی طرح کمی ہونی چاہئے جس طرح انٹرنیشنل مارکیٹ میں ہوتی ہے۔ تاکہ عوام الناس تک اس کے اثرات پہنچ سکیں۔

حکومت اپنے وعدے کے مطابق پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں عالمی منڈی کی قیمتوں کی نسبت سے پاکستان میں پٹرولیم مصنوعات کے ریٹس مقرر کرے۔ اگرحکومت وعدہ خلافی کی مرتکب ہوتی ہے تو ہم سمجھتے ہیں کہ یا توحکومت نااہل اورنالائق ہے جو اپنے وعدے پورے نہیں کرسکتی یا حکومت کرپشن اوربے ایمانی کو روکنے میں ناکام ہوگئی ہے، یہی وجہ ہے کہ بار بار پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کے ذریعے ہی منافع کمانے کی کوشش کی جارہی ہے جو قابل مذمت ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -