عدالت عالیہ نے سہیل ضیاء بٹ کی بریت کیخلاف نیب کی اپیل مسترد کر دی

عدالت عالیہ نے سہیل ضیاء بٹ کی بریت کیخلاف نیب کی اپیل مسترد کر دی

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے مسلم لیگ (ن)کے رہنما سہیل ضیاء بٹ کی بریت کے خلاف نیب کی اپیل مسترد کر دی ۔احتساب عدالت نے سہیل ضیاء بٹ کو نیب ریفرنس سے مارچ2012ء میں بری کردیا تھاجس کے خلاف نیب نے یہ اپیل دائر کی تھی ۔ نیب کے سینئر سپیشل پراسکیوٹر فیصل رضابخاری نے موقف اختیار کیا کہ سہیل ضیاء بٹ نے 1988ء میں کوآپریٹو سکینڈل کے ملزم چودھری عبدالحمید سے 20لاکھ روپے وصول کئے اور احمد مینشن نامی عمارت کا قبضہ واگزار کرا کر دیا، نیب نے تمام ثبوت احتساب عدالت میں پیش کئے مگر اس کے باوجود احتساب عدالت نے مارچ 2012ء میں سہیل ضیاء بٹ کو ریفرنس سے بری کر دیا، احتساب عدالت کا فیصلہ حقائق کے برعکس ہے ، انہوں نے استدعا کی احتساب عدالت کا فیصلہ کالعدم کرتے ہو ئے سہیل ضیاء بٹ کی بریت منسوخ کی جائے، فاضل بنچ نے نیب کے وکیل کے دلائل اور موقف کو غیرتسلی بخش قرار دیتے ہوئے سہیل ضیاء بٹ کی بریت کے خلاف نیب کی اپیل خارج کر دی ۔

اپیل مسترد

مزید :

صفحہ آخر -