الیکشن ٹربیونل کے عبوری حکم کے خلاف خواجہ سعد رفیق کی درخواست غیرمؤثر قرار

الیکشن ٹربیونل کے عبوری حکم کے خلاف خواجہ سعد رفیق کی درخواست غیرمؤثر قرار

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )سپریم کورٹ نے این اے125کے 10پولنگ سٹیشنز میں ووٹروں کے انگوٹھوں کے نشانات کی تصدیق سے متعلق الیکشن ٹربیونل کے عبوری حکم کے خلاف خواجہ سعد رفیق کی درخواست غیرمؤثر قرار دے کر نمٹا دی ۔سپریم کورٹ لاہوررجسٹری میں مسٹرجسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے خواجہ سعد رفیق کی درخواست پر سماعت کی تو ان کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ درخواست گزارنے ٹربیونل کے روبرو حلقے کے 10پولنگ سٹیشنز کے ووٹوں کے موازنے اور ووٹروں کے انگوٹھوں کے نشانات کی تصدیق کے لئے درخواست دی تھی جسے ٹربیونل نے خارج کر دیا، ٹربیونل کا یہ عبوری فیصلہ سپریم کورٹ چیلنج کیا گیا تاہم اس معاملے پر سماعت سے قبل ہی ٹربیونل نے حتمی فیصلہ سناتے ہوئے خواجہ سعد رفیق کو نااہل قرار دیدیا جنہیں بعد میں سپریم کورٹ کے حکم امتناعی کے باعث دوبارہ بحال کر دیا گیا،حتمی فیصلے کیخلاف سپریم کورٹ میں اپیل زیر التواء ہے اور حتمی فیصلے آنے کے بعد عبوری فیصلے کیخلاف زیر سماعت درخواست غیرمؤثر ہو چکی ہے جس پر دو رکنی بنچ نے درخواست غیرمؤثر قرار دیتے ہوئے نمٹا دی۔

غیر مؤثر

مزید :

صفحہ آخر -