تدریسی ہسپتالوں کے اصلاحاتی ایکٹ کیخلاف درخواستوں کی سماعت آج ہوگی

تدریسی ہسپتالوں کے اصلاحاتی ایکٹ کیخلاف درخواستوں کی سماعت آج ہوگی

  

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے چیف جسٹس مظہرعالم میانخیل ٗ جسٹس نثارحسین ٗ جسٹس ارشاد قیصر ٗ جسٹس سید افسر شاہ اور جسٹس یونس تہیم پرمشتمل لارجربنچ خیبرپختونخواحکومت کی جانب سے صوبے کے تدریسی ہسپتالوں کے اصلاحاتی ایکٹ2015ء کے خلاف دائرآئینی درخواستوں کی سماعت آج منگل کے روز تک ملتوی کردی فاضل بنچ نے پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹرحسین احمد ہارون ٗ ڈاکٹرافتخار ٗ پیرامیڈیکس ایسوسی ایشن اوردیگر ڈاکٹرتنظیموں کی جانب سے دائررٹ درخواستوں کی سماعت کی اس موقع پر ایڈوکیٹ جنرل خیبرپختونخواعبداللطیف یوسفزئی نے عدالت کو بتایا کہ ڈاکٹرتنظیموں اورصوبائی حکومت کے مابین اس حوالے سے مفاہمت طے پائی ہے اوراس حوالے سے تحریری معاہدہ بھی موجود ہے تاہم اس موقع پر درخواست گذار ڈاکٹرحسین احمد ہارون کے وکیل میاں محب اللہ کاکاخیل نے عدالت کو بتایا کہ درخواست گذار نے صوبائی حکومت کے ساتھ مفاہمت نہیں کی ہے اور نہ ہی وہ مذاکراتی عمل میں شامل ہوئے تھے لہذاوہ اس حوالے سے اپنے دلائل دیں گے جس پرفاضل بنچ نے آئینی درخواستوں کی سماعت آج منگل کے روز تک ملتوی کردی ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -