یہودی لابی مسلمانوں کا لبادہ اوڑھ کر دہشتگری میں ملوث ہے،حافظ حسین احمد

یہودی لابی مسلمانوں کا لبادہ اوڑھ کر دہشتگری میں ملوث ہے،حافظ حسین احمد

  

 چکدرہ ( نما ئندہ پاکستان ) داعش جس انداز میں داد عش دیتی ہے اسکے اسباب خود یورپ اور امریکہ نے مہیا کیجمعیت علمائے اسلام کے مرکز ی سکرٹیری ا طلاعات حافظ حسین احمد نے گذشتہ روز ضلع دیر لوئیر کے دورہ کے موقع پر ہمارے نما ئندے کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ یہودی لابی مسلمانوں کا لبادہ اوڑھ کر خود دہشت گردی کرکے مسلمانوں کو بدنام کرنے کے ساتھ ساتھ مختلف ناموں سے دینا کو گمراہ کررہی ہے حافظ حسین احمد نے کہا کہ اسامہ کے بہانے کے خاتمہ امریکہ اور نیٹو کے عبرت ناک شکت کے بعد خلیجی اور صلیبی جنگ کو جاری رکھنے کے لئے مسلمانوں کے خلاف کوئی وجہ کوئی بہانہ پیدا کرنا انکی مجبوری تھی انہوں نے کہا کہ عراق کے تیل اور وسائیل اور اپنے ظلم وستم کے ردعمل کو ملاکر انہوں نے داعش کا ٹیسٹ ٹیوب گرد بنوایا اب اسکے زریعے مشرقی وسطعی کے حصے بخرے اور انکے وسائل کے لوٹ مار کا اگلا خونی حصہ شروع کیا جارہا ہے اور اسکے لئے امریکہ اور روس کی سرد جنگ ایک بار پھر خون اشام شکل اختیار کرینگی انہوں نے کہا کہ اسلام کسی بے گناہ شخص کے قتل کو پورے انسانیت کا قتل قرار دیتے ہیں لیکن منظم سازش اور مغربی میڈیا اسلامی شائعر اور مسلمانوں کو بدنام کرنے کے لئے اپنے تمام تر وسائیل کو استعمال کیا جارہا ہے انہوں نے اپنے مسلمانوں سے بھی گلہ کیا کہ وہ انکے الہ کار نہ بنے پورے دینا میں دہشت گردی امریکہ اور یہودی لابی نے کیا، جاپان ہیروشیما پر تاریخی دہشت گردی کسی سے ڈھکی چھپی نہیں عراق، افغانستان، فلسطین، شام، لبیا سب میں لاکھوں کے تعداد میں انسانیت کا قتل ان لوگوں نے کیا ہے لیکن پھر بھی دہشتگردی کرنے اور پھیلانے والے اج انصاف کے باتیں اور اس نام سے قتل عام کررہے ہیں اور پورے دنیا کا سکون حرام کیا ہے حافظ حسین احمد نے کہا کہ پا کستانی سیاست میں دشمنی تک جا نا سیاسی دانشمندی نہیں بلکہ یہ سیاسی خودکشی کے مترادف ہیں انہوں نے کہا کہکہ مسلم لیگ اور پی ٹی آئی گرم کی بجائے نرم لہجہ اور مخاصمت کے بجائے مفاھمت پراُ صول طور پر متفق ہو تو موسم کی تبدیلی کے ساتھ ساتھ سیاسی گرمی کا بھی خاتمہ ممکن ہوسکے گا ،مفتی سعید اور حافظ سعید کے اس کارخیر میں شریک ہوں، کیونکہ بندھن اور جوڑنے کاکام وہ بہتر انداز میں کرسکتے ہیں مرکزی سکرٹیری اطلاعات حافظ حسین احمد نے کہاکہ عمران خان اور دیگر سیاسی زعماء کو پیشکش کی ہے کہ وہ قومی سیاسی معامالات میں باہمی مشاورت اور اعتماد کے فضا کو قائم رکھیں انہو ں نے کہا کہ جمعیت علمائے اسلام اور جماعت اسلامی سمیعت معتدل مذہبی اور سیاسی جماعتیں اس معاملے میں اہم رول ادا کرسکتے ہیں کیونکہ جمعیت علمائے اسلام مسلم لیگ ن کے حلیف اور جماعت اسلامی تحریک انصاف کے اتحادی ہیں اگر یہ دو جماعتیں گرم کے بجائے نرم لہجہ اور مخاصمت کے بجائے مفاحمت پر اصولی طور پر متفق ہو تو موسم کے تبدیلی کے ساتھ سیاسی گرمی کا بھی خاتمہ ممکن ہوسکے گا انہوں نے اپنے محفوظ انداز میں کہا کہ مفتی سعید اور حافظ سعید کے اس کارخیر میں شریک ہوسکے کیونکہ بندھن اور جوڑنے کاکام وہ بہتر انداز میں کرسکتے ہیں ا انہوں نے کہا کہ وقت اگیا ہے کہ عمران خان اپنا غصہ تھوک دیں اور سیاسی رہنماوں کے شان میں الفاظ کی استمال میں بھی انصاف کریں تب تحریک انصاف کے بارے میں اچھا تاثر قائم ہوسکے گا حافط حسین احمد نے کہا کہ سیاسی رہنماوں کو اپنے اختلافات دشمنی اور عدوات میں تبدیلی ہونے کے بجائے ایک دوسرے کے غم وخوشی میں شریک ہوجائے انہوں نے کہا کہ سیاسی تلخی کے بننے سے دوریاں پیدا ہوجاتی ہے انہوں نے کہا کہ کوشش کی جارہی ہے کہ سیاسی رہنما نرم گرفتار اور صلح جوئی کو اہمیت دیں اور قومی مسائیل اور ملک کو بحران سے نکالنے کے لئے ایک دوسرے کے گلے پڑنے کے بجائے گلے سے لگادیں تب اکیسویں صدی کے تقاضوں کو پورے کرتے ہوئے ملک کو بحرانوں سے نکالا جائے

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -