اسلامیات اورقرآن کی تعلیم صرف مسلم اساتذہ دینگے،حکومت پنجاب

اسلامیات اورقرآن کی تعلیم صرف مسلم اساتذہ دینگے،حکومت پنجاب

بہاولپور (بیورورپورٹ)حکومت پنجاب نے یقین دہانی کروائی ہے کہ تعلیمی اداروں میں اسلامیات اور قرآن پاک صرف مسلم اساتذہ ہی پڑھائیں گے ۔ اس بارے فوری طور پر نوٹیفکیشن جاری کیا جا رہا ہے ۔ یہ یقین دہانی پنجاب اسمبلی میں محکمہ سکول ایجوکیشن سے متعلق وقفہ سوالات کے دوارن (بقیہ نمبر31صفحہ12پر )

پارلیمانی سیکرٹری برائے محکمہ سکول ایجوکیشن جوئس روفن جولیس نے پنجاب اسمبلی میں جماعت اسلامی کے پارلیمانی لیڈر ڈاکٹر سید وسیم اختر کے شدید احتجاج اور اپوزیشن کے ایوان سے واک آؤٹ کے بعد کروائی۔تفصیلات کے مطابق وقفہ سوالات میں ڈاکٹر سید وسیم اختر نے سوال اٹھایا تھا کہ کیا پنجاب میں محکمہ تعلیم کی بھرتی پالیسی میں قادیانیوں، مرزائیوں کو اسلامیات اور عربی کا ٹیچر بھرتی ہونے سے روکنے کے لئے کوئی شق موجود ہے جس کا محکمہ کی جانب سے تحریری جواب دیا گیا کہ محکمہ سکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ نے بھرتی پالیسی میں ایسی کوئی قد غن نہیں لگائی کہ قادیانی اور مرزائی اسلامیات اور عربی کے لئے درخواستیں نہیں دے سکتے اس حوالے سے اقلیتوں کے ساتھ کسی قسم کا امتیازی سلوک روا نہیں رکھا جاتا۔ پارلیمانی سیکرٹری نے ایوان میں بھی جب اس طرح وضاحت کی تو ڈاکٹر سید وسیم اختر نے شدید احتجاج کیا اور کہا کہ جو شخص نبی کریمﷺ کے آخری نبیﷺ ہونے پر یقین ہی نہیں رکھتا وہ قرآن پاک ، اسلامیات یا عربی کیسے پڑھا سکتا ہے ۔ جب پارلیمانی سیکرٹری برائے محکمہ سکول ایجوکیشن انہیں مطمئن نہ کرسکیں تو ڈاکٹر سید وسیم اختر نے شدید احتجاج کرتے ہوئے حکومتی و اپوزیشن ارکان کو قرآن و سنت کا حوالہ دیتے ہوئے اپیل کی کہ وہ بھی ان کے ساتھ واک آؤٹ میں شریک ہوں۔ ڈاکٹر سید وسیم اختر ایوان سے باہر چلے گئے تو قائد حزب اختلاف میاں محمود الرشید نے ڈاکٹر سید وسیم اختر کے موقف کی تائید کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کو وضاحت کرنی چاہیے کہ تعلیمی اداروں میں قرآن پاک، اسلامیات یا عربی صرف مسلم اساتذہ ہی پڑھائیں گے کیونکہ قادیانیوں کو آئین میں غیر مسلم قرار دیا جا چکا ہے اور وہ آخری نبی ﷺ پر ایمان بھی نہیں رکھتے حکومتی رکن الیاس چنیوٹی و دیگر نے بھی اس معاملہ کو حساس قرار دیتے ہوئے کہا کہ اسے بلڈوز نہ کیا جائے حکومت دو ٹوک وضاحت کرے ۔ جس پر پارلیمانی سیکرٹری جوئس روفن جولیس نے ایوان کو یقین دہانی کروائی کہ تعلیمی اداروں میں اسلامیات یا عربی صرف مسلم اساتذہ ہی پڑھاہیں گے اس بارے نوٹیفکیشن جاری کر دیا جائے گا ۔ سپیکر نے صوبائی وزراء شیخ علاؤالدین اور خواجہ سلمان رفیق کو اپوزیشن کو واپس لانے کے لئے بھیجا تو وہ پارلیمانی سیکرٹری کی وضاحت اور نوٹیفکیشن جاری کرنے کی یقین دہانی پر ایوان میں اپوزِیشن واپس آ گئی۔علاوہ ازیں بہاولپور شہر میں 2008ء سے 2013ء کے دوران کل 14 سکول اپ گریڈکئے گئے جن میں 9 پرائمری سے مڈل اور پانچ مڈل سے ہائی سکول بنائے گئے۔ یہ بات صوبائی پارلیمانی سیکرٹری برائے محکمہ ایجوکیشن جوئس روفن جولیس نے وقفہ سوالات کے دوران ڈاکٹر سید وسیم اختر کے سوال کے جواب میں بتائی۔ انہوں نے مزید کہا کہ جدید ٹیکنالوجی کی روشنی میں ضرورت پڑنے پر بہاولپور کے سکولوں کی پرانی عمارتوں جو کہ زیادہ تر ایک منزلہ ہیں انہیں بنیادیں مضبوط کر کے کثیر المنزلہ بنایا جا سکتا ہے ۔ پنجاب اسمبلی میں جماعت اسلامی کے پارلیمانی لیڈر ڈاکٹر سید وسیم اختر نے حکومت کو تجویز دی ہے کہ بلدیاتی اداروں کی اراضی نیلام کرنے کی بجائے اسے کمرشلائزڈ کر کے کرایہ پر دیا جائے تا کہ ان اداروں کو مستقل آمدن حاصل ہو سکے۔ وہ پنجاب اسمبلی میں مسودہ قانون (ترمیم) حکومت پنجاب 2016 پر اپنی ترمیم کے حق میں دلائل دے رہے تھے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر