قانون کے محافظوں پر گولی چلانا نا قابل معافی جرمہے :ناصر خان درانی

قانون کے محافظوں پر گولی چلانا نا قابل معافی جرمہے :ناصر خان درانی

پشاور( کرائمز رپورٹر ) انسپکٹر جنرل آ ف پولیس خیبر پختونخوا ناصر خان دُرانی نے کہاہے کہ قانون کے محافظوں پر گولی چلانا ناقا بل معا فی جرم ہے اورپشاور پولیس کے اعلیٰ حکام کو سختی سے ہدایت کی کہ وہ سٹی پیٹرول کے شہید پولیس آفیسرعصمت اللہ کے قاتلوں کو جلد ازجلد گرفتار کرکے انصاف کے کٹہرے میں لا کرکھڑا کر دیں۔ یہ ہدایات انہوں نے آج پشاور اچینی بالا میں شہید پولیس آفیسر عصمت اللہ کے اہلحانہ سے فاتحہ خوانی کے موقع پر جاری کی۔آئی جی پی نے کہا کہ خیبر پختونخوا پولیس کی تاریخ شہداء کی قربانیوں سے بھری پڑی ہے۔ اور شہید عصمت اللہ نے اس میں اور باب کا اضافہ کر دیا۔ انہوں نے واضح کیا کہ خیبر پختونخوا پولیس امن و آمان کی بحالی اور دہشت گردی کے سرکوبی کے لیے اپنی قیمتی جانوں کے نذرانے پیش کرتے ر ہیں گے۔انہوں نے کہاکہ دُنیا کے کسی بھی ملک میں پولیس کو قتل کرنے والوں کے لئے معافی اور رعا یت کی کو ئی گنجائش نہیں اور رات کی تاریکی میں قانون کے رکھوالوں پر فائرنگ کرنا مجرموں کی بزدلانہ فعل کا منہ بولتاثبوت ہے اورموقع پر موجود پولیس حکام کو ہدایت کی کہ وہ اس کیس کو بطور چیلنج قبول کریں اور ملزمان کو جلد ازجلد گرفتار کرکے انہیں کڑی سزادلوائی جائے۔ پولیس سر براہ نے شہید ہونے والے پولیس آفیسر کو شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کر تے ہو ئے کہا کہ انہوں نے رات کی تاریکی میں عوام کے جان ومال کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے فرائض کی ادائیگی کے دوران قیمتی جان کا نذرانہ پیش کیا۔ آئی جی پی نے کہا کہ شہید ہونے والے افیسرکی قربانی رائیگاں نہیں جا ئے گی۔ قاتل جہاں بھی ہو وہ قانون کی گرفت سے بچ نہیں سکتے اور اُنہیں بہت جلد گرفتار کرکے عبرت کانشانہ بنادیا جائیگا۔ سی سی پی اُو پشاور محمد طاہر خان اور ایس ایس پی آپریشن سجاد خان بھی اس موقع پر آئی جی پی کے ہمراہ تھے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...