سپریم کورٹ نے 15مارچ 2017تک مردم شماری کرانے کا حکم جاری کردیا

سپریم کورٹ نے 15مارچ 2017تک مردم شماری کرانے کا حکم جاری کردیا
سپریم کورٹ نے 15مارچ 2017تک مردم شماری کرانے کا حکم جاری کردیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (مانیٹر نگ ڈیسک )سپریم کورٹ نے حکومت کو 15مارچ 2017تک مردم شماری کرانے کا حکم دے دیا ۔سپریم کورٹ میں چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کی سربراہی میں فل بینچ نے مردم شماری میں تاخیر کے معاملے پر ازخود نوٹس کیس کی سماعت کی جس میں عدالت نے حکم جاری کیا کہ حکومت 15مارچ 2017تک مردم شماری شروع کرائے اور اسے دو مہینے کے اندر اندر 15مئی تک مکمل کرے،اگر ایسا نہ کیا گیا تو وزیراعظم کو طلب کرنے کا ہی آپشن رہ جاتا ہے ۔

پاکستان نے ہر فورم پر فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کیا ،ڈاکٹر ملیحہ لودھی کا اقوام متحدہ اجلاس میں خطاب

سماعت کے دوران چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس انور ظہیر جمالی نے کہا ہے کہ مردم شماری کے بغیر الیکشن کا انعقاد ملک کے ساتھ مذاق ہے ،وزیراعظم نواز شریف مردم شماری کرانے کی تاریخ دیں یا خود آکر بتائیں ۔انہوں نے کہا کہ عوام کی تعداد کسی کو معلوم ہی نہیں ہے ،ملکی پالیسیاں ہوا میں بن رہی ہیں ۔عدالت میں حکومت نے مردم شماری کرانے کے لیے مئی 2017سے جون تک کے لیے تین ماہ کا وقت مانگا تھا۔

مزید : قومی /اہم خبریں