ڈونلڈ ٹرمپ اور نوازشریف کے درمیان رابطہ ، پوری دنیا کے میڈیا میں کھلبلی مچ گئی

ڈونلڈ ٹرمپ اور نوازشریف کے درمیان رابطہ ، پوری دنیا کے میڈیا میں کھلبلی مچ ...
ڈونلڈ ٹرمپ اور نوازشریف کے درمیان رابطہ ، پوری دنیا کے میڈیا میں کھلبلی مچ گئی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) مختلف ریاستوں کے سربراہان میں رابطے اور کسی کی کامیابی پر مبارکباد دینا ، ایک دوسرے کیلئے نیک خواہشات کا اظہارمعمول کی بات ہے لیکن پاکستان کی طرف سے وزیراعظم نوازشریف اور امریکہ کے منتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے درمیان رابطے کے اعلامیہ پر دنیا بھر کا میڈیا حیران رہ گیا، اس کی وجہ شاید اعلامیہ میں بتائی جانیوالی باتیں تھیں۔

حکومت پاکستان کی طرف سے جاری اعلامیہ میں کہاگیاکہ’ ’وزیراعظم نوازشریف نے ڈونلڈٹرمپ کو ٹیلی فون کیا اور کامیابی پر مبارکباد دی، ٹرمپ کا کہناتھاکہ وزیراعظم نوازشریف ، آپ کی بہت اچھی شہرت ہے ، آپ لاجواب آدمی ہیں،آپ حیران کردینے والا کام کررہے ہیں جو دکھائی دیتاہے ، میں جلدآپ سے ملنے کاخواہاں ہوں ، جیسا کہ میں وزیراعظم آپ سے بات کررہاہوں توایسے لگتاہے کہ ایک ایسے شخص سے بات کررہاہوں جسے لمبے عرصے سے جانتاہوں، آپ کے ملک میں زبردست مواقع ہیں، پاکستانی ذہین ترین لوگوں میں سے ہیں ، میں تیار ہوں اور آپ کی خواہش پر کسی بھی مسئلے میں اپنا کردار اداکرسکتاہوں،یہ ایک اعزاز ہوگا اور میں ذاتی طورپر یہ کروں گا، صدر کی ذمہ داریاں سنبھالنے یعنی 20جنوری سے قبل بھی آپ کی جب مرضی آئے ، کال کرسکتے ہیں“۔

نو منتخب امریکی صدر نے نوازشریف کی دورہ پاکستان کی دعوت قبول کر لی ،پاکستانی بہت اچھے لوگ ہیں :ٹرمپ کا نوازشریف کو عوام کیلئے پیغام ، اور کیا کچھ کہا؟ تفصیلات کیلئے یہاں کلک کریں۔

دونوں رہنماﺅں کے درمیان ہونیوالی گفتگو کامتن سامنے آتے ہی دنیا بھر کے میڈیا میں ہلچل مچ گئی اور واشنگٹن پوسٹ نے لکھاکہ’پاکستانیوں کی کھلے دل سے تعریف ڈونلڈ ٹرمپ کا بڑا یوٹرن ہے کیونکہ 2012ءمیں ٹرمپ پاکستان کو برابھلا کہہ چکے ہیں، نوازشریف کو اس طرح ملک میں بھی پسند نہیں کیاجاتا جتنی ٹرمپ نے تعریفیں کیں، اسے کرپشن اور پاناماپیپرز کی وجہ سے مشکلات کا سامنا ہے ۔

نیوزویب سائٹ Voxنے لکھاکہ ’یہ سمجھنا مشکل ہے کہ کچھ پاکستانی بیوروکریٹ ٹرمپی لائنز بنارہے ہیں جیساکہ ’پاکستانی دنیا کے ذہین ترین لوگوں میں سے ایک ہیں‘۔۔۔ جس کے بارے میں سوچنا چاہیے کہ کم ذہین لوگ کون ہیں، اس کا مطلب اس کے سواکچھ نہیں کہ ٹرمپ کی مسلمانوں پر پابندی کی پالیسی کے تحت ان سب سے زیادہ ذہین لوگوں کاامریکہ داخلہ بند ہوجائے ۔

بھارتی میڈیا نے اپنی ٹوئیٹس میں وزیراعظم نواز شریف کے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ٹیلی فون کو مختلف رنگ اور زبان دی ہے، این ڈی ٹی وی نے اپنی ٹوئیٹ میں کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی فون کال بارے پاکستان کا اعلامیہ حیران کن ہے جبکہ دی ہندو نے پاکستان کے مسائل کے حل کیلئے اسے ”پلے اینی رول“کا نام دیا ہے،ڈیکن ہیرالڈنے ٹرمپ کی پاکستان کے مسائل حل کرنے کی خواہش کا اظہار لکھا ہے،اے بی سی نیوز نے پاکستان،ٹرمپ نے وزیر اعظم کو بتایا کہ میں خطاب کرکے حل تلاش کروں گا لکھا ہے،سی بی ایس نیوز نے لکھا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے پاکستان بہترین لوگوں کی بہترین جگہ ہے،دی انڈین ایکسپریس نے لکھا ہے کہ ”نواز شریف کے مطابق نواز شریف کو ٹرمپ کو کیسے دعائیں دینی پڑیں،،لکھا ہے۔

برطانوی اخبار انڈیپنڈنٹ نے لکھاکہ ڈونلڈ ٹرمپ کبھی بھی پاکستان کے وزیراعظم نوازشریف سے نہیں ملے لیکن وہ جانتے ہیں کہ بہت اچھی شہرت کے حامل ہیں اور سمجھ سکتے ہیں کہ وہ ایک لاجواب شخص ہیں ۔اخبار کے مطابق دراصل ٹرمپ سمجھتے ہیں کہ پاکستانی رہنماءکیساتھ ایسے رابطے اچھے ہیں جہاں کا وہ جلد دورہ کرنے کی امیدکرتے ہیں اور ایسا محسوس کرتے ہیں کہ ایک ایسے شخص کیساتھ بات کررہے ہیں جنہیں وہ ایک لمبے عرصے سے جانتے ہیں۔

برطانیہ کے ہی دی ٹائم نے لکھاکہ آستینیں چڑھا کرشعلہ بیانیوں سے ڈونلڈ ٹرمپ ٹیلی فون پر آگئے جس دوران نوازشریف نے اُنہیں الیکشن میں جیت پر مبارکباد پیش کی اور پاکستان کے دورے کی دعوت دی ۔

اسی طرح دیگر عالمی ویب سائٹس نے بھی مختصر تبصروں میں اپنی دلچسپی کا اظہار کیا ہے،نیو ری پبلک نے اسے امریکیوں کیلئے بہتری قراردیا ہے،وال سٹریٹ جنرل لکھتا ہے کہ ٹرمپ نے پاکستان کے قائد کو ”لاجواب انسان“کہا ہے،دی ڈپلومیٹ نے اسے پاکستان اور بھارت کے درمیان جنگی کیفیت کو کم کرنے کیلئے ایک قدم قرار دیا ہے،بزنس انسائیڈرنے اسے پاکستان کی طرف جاری کردہ ناقابل یقین اعلامیے کا نام دیا ہے،ٹائم نے اسے ٹرمپسٹ کال کا نام دیا ہے،فارن پالیسی لکھتا ہے کہ وہ جو چاہتا ہے میں کروں گا ڈونلڈ ٹرمپ نے پاکستان کو بتا دیا،ایکوائر ڈاٹ کام نے پاکستانی قائد کیلئے سرپرائزقرار دیا ہے،کامن ڈریمز نے اسے غیر روایتی قراردیتے ہوئے پاکستان کو کوموں میں بہترین لکھا ہے۔

مزید : قومی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...