’جب میرا بیٹا گھر سے نکلا تو مجھے تب ہی معلوم ہوگیا تھا کہ۔۔۔‘ طیارہ حادثے میں مارے جانے والے برازیلین کھلاڑی کی ماں کا وہ انکشاف جس پر پوری دنیا دنگ رہ گئی

’جب میرا بیٹا گھر سے نکلا تو مجھے تب ہی معلوم ہوگیا تھا کہ۔۔۔‘ طیارہ حادثے ...
’جب میرا بیٹا گھر سے نکلا تو مجھے تب ہی معلوم ہوگیا تھا کہ۔۔۔‘ طیارہ حادثے میں مارے جانے والے برازیلین کھلاڑی کی ماں کا وہ انکشاف جس پر پوری دنیا دنگ رہ گئی

  

برازیلیا(مانیٹرنگ ڈیسک)ماں کی اپنی اولاد کے لیے محبت کا اس سے بڑھ کر مقام کیا بیان کیا جا سکتا ہے کہ اللہ تعالیٰ نے بھی جب اپنے بندوں سے محبت کا اظہار کرنا چاہا تو ماں کی محبت کو مثال بنایا۔ بچے پر کوئی افتاد پڑے تو کہیں دور بیٹھی ماں کا جذبہ¿ محبت بچے کی اس تکلیف کو بھی بھانپ لیتا ہے اور ماں بے قرار ہو جاتی ہے۔ گزشتہ دنوں کولمبیا میں ہوائی حادثے میں جاں بحق ہونے والے ایک فٹ بالر کی ماں نے بھی ایسے ہی خطرے کو پیشگی بھانپ لیا تھا اور بے قرار ہو گئی تھی۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 22سالہ کھلاڑی تیاگو کی والدہ باربرا روچا نے گزشتہ روز ایک انٹرویو میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ”جب میرا بیٹا گھر سے روانہ ہوا اسی وقت سے میں اس پرواز کو بدقسمت خیال کر رہی تھی۔ اس روز میں تمام دن بے قرار اور انتہائی برا احساسات کے زیراثر رہی۔ تمام دن میرے سینے میں ایک جکڑن سی رہی اور مجھے یوں محسوس ہوتا رہا جیسے آج کچھ بہت برا ہونے جا رہا ہے۔“

داعش میں شمولیت کیلئے کیا بات کہی گئی کہ سن کر فوری تیار ہوگیا؟ عرب ملک میں پکڑے جانے والے داعش کے کارکن نے ایسا راز بے نقاب کردیا کہ جان کر مسلمانوں کی پریشانی کی حد نہ رہے گی

رپورٹ کے مطابق تیاگو کی والدہ کا مزید کہنا تھا کہ ”میں نے تیاگو کے سوتیلے باپ سرگیو سے کہا کہ اب تک تیاگو کی طرف سے کوئی خبر نہیں آئی۔ جواب میں انہوں نے کہا کہ مجھے پریشان نہیں ہونا چاہیے اور پرسکون ہو کر سو جانا چاہیے۔مگر میں تمام رات بے چین رہی اور سو بھی نہ سکی۔ صبح 6بجے میرے دوست میرے گھر آئے اور دروازے پر دستک دی۔ جب میں باہر گئی تو انہوں نے بتایا کہ تم جانتی ہو کیا ہو گیا ہے؟میں نے پوچھا کہ کیا ہوا ہے؟ اس پر انہوں نے مجھے گلے لگا لیا اور بتایا کہ تیاگو کا طیارہ کولمبیا میں ایندھن کم ہونے کی وجہ سے گر کر تباہ ہو گیا ہے۔ یہ سنتے ہی میرا دل بیٹھنے لگا اور میں گزشتہ روز سے ہونے والی بے چینی کا مطلب سمجھ گئی۔“

روچا نے آنسو پونچھتے ہوئے مزید کہا کہ ” اس وقت تک یہ خبر آئی تھی کہ 25لوگ جاں بحق ہوئے ہیں، یہ سن کر میں نے امید باندھ لی کہ میرا بیٹا سلامت ہو گا لیکن ایسا نہیں تھا۔ اسی دوران مجھے تیاگو کے منیجر کی کال آئی۔ میں نے اسے بتایا کہ مجھے خدا پر بھروسہ ہے کہ میرا بیٹا زندہ ہو گا۔ وہ جانتا تھا کہ ایسا نہیں ہے مگر اس میں تیاگو کی موت کے متعلق مجھے بتانے کی ہمت نہ تھی۔ سب جانتے تھے کہ میرا بیٹا اب نہیں رہا۔ ایک میں ہی اس کے زندہ ہونے کی امید لگائے ہوئے تھی۔ پھر انہوں نے مجھے بھی بتا دیا کہ تیاگو اب نہیں رہا۔ میرے بیٹے کو ایک ہفتہ قبل ہی معلوم ہوا تھا کہ اس کی 18سالہ بیوی گریزیلے حاملہ ہے اور وہ باپ بننے والا ہے۔ وہ اس روز بہت خوش تھا۔ یہ جان کر میں اور سرگیو بھی بہت خوش تھے کیونکہ ہم دادا دادی بننے جا رہے تھے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس