پرویز مشرف حملہ کیس میں گرفتار3ملزمان ناکافی شواہد پربری

پرویز مشرف حملہ کیس میں گرفتار3ملزمان ناکافی شواہد پربری

اسلام آباد(آئی این پی)سپریم کورٹ نے پرویز مشرف حملہ کیس میں گرفتار3ملزمان کو ناکافی شواہد کی بنیاد پربری کردیا، جسٹس دوست محمد نے کہا کہ مچھلی اصلی تھی، استغاثہ کی غفلت کے باعث جال سے نکل گئی، جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا کہ استغاثہ کیس ثابت کرنے میں ناکام رہا، تینوں ملزمان کا تعلق کالعدم تحریک طالبان پاکستان سے تھا،اس سے قبل ٹرائل کورٹ نے ملزمان کو سزائے موت سنائی تھی،جبکہ ہائیکورٹ نے ملزمان کی سزا کو عمر قید میں تبدیل کردیا تھا ۔جمعرات کو سپریم کورٹ نے پرویز مشرف حملہ کیس کے تینوں ملزمان کو بری کردیا، تینوں ملزمان کو ناکافی شواہد کی بنیاد پر بری کیا گیا، سپریم کورٹ کے جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی،جسٹس دوست محمد نے کہا کہ مچھلی اصلی تھی ،استغاثہ کی غفلت کے باعث جال سے نکل گئی،جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا کہ استغاثہ کیس ثابت کرنے میں ناکام رہا۔ملزمان میں انتخاب عباسی، ظفر علی اور محمد کبیر شامل ہیں،تینوں ملزمان پر پرویز مشرف پر حملے کا الزام اور تعلق کالعدم تحریک طالبان پاکستان سے تھا۔ اس سے قبل ٹرائل کورٹ نے ملزمان کو سزائے موت سنائی تھی،ہائیکورٹ نے ملزمان کی سزا کو عمر قید میں تبدیل کردیا تھا۔

مزید : صفحہ آخر