16ارب روپے کے واجبات ادا نہ کرنے پر پی آئی اے کو تیل کی سپلائی، پروازیں تاخیر کا شکار

16ارب روپے کے واجبات ادا نہ کرنے پر پی آئی اے کو تیل کی سپلائی، پروازیں تاخیر ...

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان اسٹیٹ آئل نے واجبات کی عدم ادائیگی پر پی آئی اے کو تیل کی سپلائی جزوی معطل کردی جس سے قومی ایئرلائن کی پروازیں تاخیر کا شکار ہوگئیں۔جیونیوز کے مطابق قومی ایئرلائن پی آئی اے نے پاکستان اسٹیٹ آئل ( پی ایس او) کو گزشتہ ایک سال سے واجبات کی ادائیگی نہیں کی جس کے باعث پی آئی اے کے اوپر پی ایس او کے 16 ارب روپے واجب الادا ہیں۔پی ایس او ذرائع کے مطابق پی آئی اے اور پی ایس او کے درمیان 16 ارب روپے کے واجبات کی بعد میں ادائیگی لیکن روزانہ ساڑھے تین کروڑ روپے ادا کرنے کی بات ہوئی تھی مگر پی آئی اے کی جانب سے یہ ادائیگی بھی نہیں کی جارہی جس کے باعث پی ایس او نے تیل کی سپلائی جزوی طور پر معطل کردی ہے۔پی ایس او ذرائع کا کہنا ہے کہ وعدے کے باوجود واجبات ادا نہیں کیے گئے، مالی دباؤ کے سبب بدھ کے روز بھی سپلائی بند کی گئی تھی تاہم مسافروں کی مشکلات کے سبب پوری سپلائی نہیں روک رہے۔دوسری جانب ایئرپورٹ ذرائع کے مطابق تیل کی عدم فراہمی پر پی آئی اے کی کراچی سے اسلام آباد اور لاہور جانے والی پروازیں تاخیر کا شکارہوگئیں۔ذرائع نے بتایا کہ پی کے 308 کو 3 بجے اسلام آباد سے روانہ ہونا تھا لیکن پرواز 4 بجے کے بعد بھی روانہ نہ ہوسکی جب کہ لاہور جانے والی پرواز پی کے 304 بھی روانہ نہیں ہوسکی اور دونوں پروازیں تاخیر کا شکار ہوگئیں۔

مزید : صفحہ آخر