صدر السیسی کا فوجی کمان کو تین ماہ میں شمالی سیناء کو شورش سے پاک کرنے کا حکم

صدر السیسی کا فوجی کمان کو تین ماہ میں شمالی سیناء کو شورش سے پاک کرنے کا حکم

قاہرہ(این این آئی) مصر کے صدر عبدالفتاح السیسی نے فوج کی اعلیٰ کمان کو آیندہ تین ماہ میں شورش زدہ علاقے شمالی سیناء کو دہشت گردوں سے پاک کرنے کا حکم دیا ہے اور انھیں ہدایت کی ہے کہ وہ اس مقصد کے لیے تمام ضروری طاقت استعمال کریں۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق صدر السیسی نے ایک تقریر میں مسلح افواج کے نئے چیف آف اسٹاف کو مخاطب کرکے کہا کہ سیناء کو آیندہ تین ماہ میں محفوظ اور مستحکم بنانا آپ کی ذمے داری ہے۔آپ تمام ضروری اور سخت انداز میں طاقت کا استعمال کرسکتے ہیں۔ لیکن انھوں نے سیناء میں اس آپریشن کی کوئی تفصیل نہیں بتائی ۔شمالی سیناء میں واقع الروضہ مسجد بھی گذشتہ جمعہ کو دہشت گردوں نے قتل عام کیا تھا اور نماز جمعہ کے وقت ان کے بم حملے اور فائرنگ سے 305 نمازی جاں بحق اور 130 سے زیادہ زخمی ہوگئے تھے۔اس تباہ کن حملے کے بعد صدر السیسی نے فوج کو یہ نئی ہدایت جاری کی ہے۔ابھی تک کسی گروپ نے الروضہ مسجد پر اس تباہ کن حملے کی ذمے داری قبول نہیں کی ہے لیکن شمالی سیناء میں گذشتہ تین سال سے مصری فورسز داعش سے وابستہ ایک مقامی جنگجو گروپ کے خلاف برسر پیکار ہیں۔اس گروپ نے اب تک تباہ کن بم دھماکوں اور مسلح حملوں میں سیکڑوں فوجیوں ، پولیس اہلکاروں اور عام شہریوں کو ہلاک کردیا ہے۔ مصری فورسز نے اس سے پہلے بھی اس جنگجو گروپ کے خلاف تین بڑی کارروائیاں کی تھیں لیکن وہ داعش سے وابستہ ان دہشت گردوں کا مکمل قلع قمع نہیں کرسکی ہیں ۔

مزید : عالمی منظر