نوشہرہ ،نجی تعلیمی ادارے کے استاد کا طالبعلم پر تشدد ،بازو توڑ دیا

نوشہرہ ،نجی تعلیمی ادارے کے استاد کا طالبعلم پر تشدد ،بازو توڑ دیا

نوشہرہ ( بیورورپورٹ ) نوشہرہ کے علاقہ اکوڑہ خٹک میں نجی تعلیمی ادارے دی سٹوڈنٹ ماڈل ہائی سکول کی ٹیچر کا دوسری جماعت کے طالب علم پرتشدد بچے کا ہاتھ توڑ ڈالا متاثرہ طالبعلم کے والدین کا نجی تعلیمی ادارے دی سٹوڈنٹ ماڈل ہائی سکول کی انتظامیہ اور ٹیچر کے خلاف زبردست احتجاج اور اعلیٰ حکام کو شکایت چےئر مین بورڈ آف انٹر میڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن مردان واقعے کی اطلاع ملتے ہی متاثرہ طالب علم سے ملے اور سکول کی انتظامیہ کو جلد از جلد انکو ا ئری رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا تفصیلات کے مطابق نوشہرہ کے علاقہ اکوڑہ خٹک میں مین جی ٹی روڈ پر واقع دی سٹوڈنٹ ماڈل ہائی سکو ل کی ٹیچر نے دوسری جماعت کے عباس نامی طالب علم کو کسی غلطی کی سزا دے رہی تھی اور اس دوران ٹیچر کسی بات پر طش میں آگئی جس پر انہوں نے بچے کو بد ترین تشدد کا نشانہ بنا دیا اور طالب علم عباس کا ہاتھ توڑ دیا متاثرہ طالبعلم عباس کے والدین اور عزیز و اقارب کا دی سٹوڈنٹ ماڈل ہائی سکول کی انتظامیہ کے خلاف زبردست احتجاج کیا اور مردان بورڈ کو شکایت کی جس پر چےئر مین مردان بورڈ آف سیکنڈری ایجوکیشن پروفیسر ڈاکٹر شوکت حیات نے اطلاع ملتے ہی سٹوڈنٹ ماڈل ہائی سکول کا دورہ کیا اور متاثرہ طالبعلم سے بھی ملے اس سلسلے میں باخبر زرائع نے بتایا کہ چےئر مین بورڈ آف انٹر میڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن پروفیسر ڈاکٹر شوکت حیات نے سکول انتظامیہ کو جلد از جلد انکو ا ئری رپورٹ پیش کرنے اور مذکوری خاتون ٹیچر کے خلاف قانونی کاروائی کا بھی حکم دے دیا ہے ۔

مزید : کراچی صفحہ اول