آل فاٹا انٹر سکولز فیمیل سپورٹس گالا اختتام پذیر

آل فاٹا انٹر سکولز فیمیل سپورٹس گالا اختتام پذیر

پشاور( سپورٹس رپورٹر) ڈائریکٹر آف سپورٹس فاٹا کے زیراہتمام انٹر سکولز فیمیل سپورٹس گالا اختتام پذیر ہوگیا ، خیبرایجنسی کی طالبات نے بہترین کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے میجر ٹرافی اپنے نام کرلی ، خیبرایجنسی نے مجموعی طور پر 75 پوائنٹس حاصل کئے جبکہ مہمند ایجنسی 70 پوائنٹس کے ساتھ دوسری نمبر پر رہی ، آخری روز والی بال فائنل میچ میں خیبرایجنسی نے مہمند ایجنسی کو دو ایک سے شکست دیدی ، مہمان خصوصی ڈائریکٹر سپورٹس فاٹا محمد نواز خان نے کھلاڑیوں میں ٹرافیاں اور دیگرانعامات تقسیم کئے ان کے ہمراہ اسسٹنٹ ڈائریکٹر نازیہ زکی ، اکاؤنٹ سپرنٹنڈنٹ طارق خان ، کوچز ایوب خان اور عامراقبال ، پرنسپلز ، ڈی پی ایزسمیت دیگر اہم شخصٰات موجود تھی، ڈائریکٹریٹ آف سپورٹس فاٹا این یوتھ آفیئرز کے زیراہتمام قیوم سپورٹس کمپلیکس پشاورمیں منعقدہ دو روزہ آل فاٹا انٹر سکولز فیمیل مقابلے اختتام پذیر ہوئے جس میں خیبر ایجنسی نے بہترین کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے میجر ٹرافی اپنے نام کی ۔ ان مقابلوں میں فاٹا کی مختلف سکولز کی بچیوں نے چار مختلف گیمز ایتھلیٹکس ، رسہ کشی ، بیڈمنٹن اور والی بال مقابلوں میں حصہ لیا ، آخری روز کھیلے گئے والی بال میں خیبرایجنسی نے مہمند ایجنسی کو 25-11,22-25 اور25-19 سے شکست دی جبکہ بیڈمنٹن میں مہمند ایجنسی نے خیبرایجنسی کو تین دو سے ہراکر ٹرافی اپنے نام کی ۔ ایتھلیٹکس میں مہمند ایجنسی نے پہلی جبکہ رسہ کشی میں خیبرایجنسی نے برتری حاصل کی اس طرح مجموعی طور پر خیبرایجنسی کی ٹیم پانچ پوائنٹس کے فرق سے 75 کیساتھ پہلے نمبر رہی جبکہ مہمند ایجنسی 70 پوائنٹس کے ساتھ دوسری نمبر پر رہی ۔آخر میں مہمان خصوصی ڈائریکٹر سپورٹس فاٹا محمد نواز خان اور اسسٹنٹ ڈائریکٹر نازیہ زکی نے کھلاڑیوں میں انعامات تقسیم کئے ۔ ڈائریکٹر سپورٹس محمد نواز نے کہا کہ فاٹا میں مردوں کے ساتھ ساتھ خواتین کھیلوں پر ڈائریکٹر یٹ آف سپورٹس فاٹا بھرپور توجہ دے رہی ہے اس کے علاوہ فاٹا خواتین ٹیچرز اور کھلاڑیوں کیلئے وقتاً فوقتاً ٹریننگ و کوچنگ کیمپ کا بھی انعقاد کیاجاتا ہے جس سے فاٹا خواتین میں پوشیدہ ٹیلنٹ سامنے لانے میں بھرپور مدد ملتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آگلے مہینے سے آل فاٹا یوتھ فیسٹول میں بھی خواتین کے مقابلے شامل کئے گئے ہیں امید ہے ان مقابلوں میں فاٹا کی خواتین بھرپور شرکت کرینگی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر