ایسی فلم کے انتظار میں تھی کہ پرستار ”مجاجن“ کو بھول جائیں،مدیحہ شاہ

ایسی فلم کے انتظار میں تھی کہ پرستار ”مجاجن“ کو بھول جائیں،مدیحہ شاہ

  



لاہور(فلم رپورٹر)نامور اداکارہ مدیحہ شاہ نے کہاہے کہ ”مجاجن“ کے بعد مجھے متعدد فلموں میں کام کی پیشکش ہوئی لیکن ایسا کوئی کردار نہیں ملا جسے کرنے کے بعد میں میرے پرستار ”مجاجن“ کو بھول کر اس کے سحر میں مبتلا ہو جاتے، 13سال کے طویل وقفے کے بعد ایسی فلم میں کام کی پیشکش ہوئی ہے جس کی کہانی میرے دل کو چھو گئی اور میں نے کردار نبھانے کی حامی بھر لی۔ مدیحہ شاہ نے کہا کہ مجھے 13سالوں میں بے شمار فلموں میں کام کرنے کی پیشکش ہوئی لیکن ”مجاجن“میں جو کام کر چکی تھی وہ میرے پرستاروں کے ذہنوں پرنقش تھا اور مجھے ایسا کردار نہیں ملاجو ”مجاجن“کی جگہ لے سکے اس لئے میں نے طویل انتظار کیا۔

انہوں نے کہاکہ پرویز کلیم نے مجھے اپنی نئی فلم کیلئے قائل کیا اور جب میں نے اس کی کہانی سنی تو مجھے اس میں اپنے لئے منتخب کئے گئے کردار میں واضح مارجن نظر آیا۔میں یہی سوچ رہی تھی کہ ایسا کوئی مشکل کردار آئے جو کوئی اورنہ کر سکے اور میں اپنی فنی صلاحیتوں کو بروئے کار لاؤں۔انہوں نے کہا کہ میرے پرستاروں نے اتنے طویل وقفے کے بعد جب دوبارہ فلم میں کام کرنے کی خبر سنی تومجھے والہانہ انداز میں خوش آمدید کہا گیا او رمیرے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا گیا جس پر میں ان کی شکر گزار ہوں۔ انہوں نے کہا کہ آج کے دور میں ایسی فلم ہونی چاہیے جس میں انٹرٹینمنٹ کے سارے مصالحے موجود ہوں کیونکہ اس کے بغیر فلم بینوں کو سینما گھر آنے کے لئے راغب نہیں کیا جا سکتا۔

مزید : کلچر