آرمی چیف کی مدت میں توسیع کا فیصلہ 6 ہفتوں میں ہو جائے گا،شیخ رشید

آرمی چیف کی مدت میں توسیع کا فیصلہ 6 ہفتوں میں ہو جائے گا،شیخ رشید

  



لاہور(لیڈی رپورٹر،نیوزایجنسیاں)پاکستان ریلوے میں نئے سال میں نئی تجدید کریں گے۔ اس کے انفراسٹرکچر کو مزید بہتر بنائیں گے اور پوری کوشش کریں گے کہ ریلوے میں بہتر کارکردگی نہ دکھانے والے ریلوے افسروں کو بھی نئے سال میں تبدیل کر دیا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے ریلوے ہیڈ کوارٹرز میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ اگر ہمیں 3تاریخ کو افغان راہداری کا کام مل گیا جس کے لئے ہم 5ٹرینیں چلا سکتے ہیں تو ریلوے کو 5سال کی بجائے 3سال میں خسارے سے نکال دیں گے۔ یہ پاکستان کی تاریخ کا سب سے اہم واقعہ ہو گا کہ وہ ریلوے جو خسارے میں چل رہی تھی اور وہاں لوگ پرچیز کرتے تھے ہم نے ایک روپے کی ابھی تک پرچیز نہیں کی۔ وزیر ریلوے شیخ رشید نے وفاقی حکومت کی غلطیوں اور پنجاب حکومت کی خراب کارکردگی کا اعتراف کیا ہے۔لاہور میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا 18 ویں ترمیم میں تبدیلی آئینی طریقے سے ہی لائی جا سکتی ہے۔آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے حوالے سے بات کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ اس معاملے میں ہم سے غلطیاں ہوئی ہیں لیکن ہماری نیت صاف تھی، ہم اپنا بیانیہ صحیح طریقے سے پیش نہیں کر سکے۔شیخ رشید نے کہا کہ پاکستان میں جتنا ہیجان برپا کیا گیا وہ سارا دم توڑ گیا ہے، جنرل باجوہ کو نئے تین سال مل گئے ہیں اور ہمارے بھی 3 سال ابھی باقی ہیں۔ان کا کہنا تھا سپریم کورٹ نے اس معاملے پر دور اندیشی کا مظاہرہ کیا، 6 ماہ تو دور کی بات 6 ہفتوں میں جنرل باجوہ کی توسیع کا فیصلہ ہو جائے گا۔پنجاب حکومت کی کارکردگی سے متعلق سوال پر وفاقی وزیر نے کہا دیگر لوگوں کی طرح مجھے بھی پنجاب حکومت پر تحفظات ہیں لیکن عثمان بزدار اس سیکھ چکے ہیں، آگے ان کی کارکردگی میں بہتری آئے گی۔پنجاب میں تبدیلی سے متعلق سوال پر شیخ رشید نے کہا کہ میرا نہیں خیال کہ کوئی تبدیلی آئے گی، ٹیم کپتان کی قیادت میں ہی کھیلے گی۔سی پیک پر امریکی خدشات کے حوالے سے بات کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا سی پیک کے حوالے سے پوری دنیا میں سازشیں ہو رہی ہیں لیکن ساری قوم سی پیک اور چین کے ساتھ ہے، ایم ایل ون سیک پیک کا حصہ ہے جو ہر صورت مکمل ہوگا۔ریلوے میں کرپشن کے خاتمے کے لیے اقدامات کا بتاتے ہوئے شیخ رشید نے اس بات کا بھی اعتراف کیا کہ وہ کام نہیں کر سکا جو کرنا چاہتا تھا۔اپوزیشن کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے وزیر ریلوے نے کہا کہ ایک مافیا ہے جو حکومت کو غیر مستحکم کرنا چاہتی ہے، جو یہ کہہ رہے ہیں کہ عمران خان این آر او دے گا وہ یہ سن لیں کہ عمران خان کسی صورت این آر او نہیں دے گا۔سابق صدر کے حوالے سے بات کرتے ہوئے وزیر ریلوے نے کہا کہ آصف زرداری کے لوگ بھی پلی بارگین کے لیے لگے ہوئے ہیں، امید ہے مارچ تک اس کا بھی کوئی نتیجہ نکل آئے گا، آصف زرداری کے پلی بارگین کے ساتھ پرانے کیس اپنی موت آپ مر جائیں گے، آصف زرداری کے کوئی اور تازہ کیس آ جائیں گے۔

شیخ رشید

مزید : صفحہ اول