نوشہرہ ورکاں، مقدمہ قتل میں  ملوث ملزم پیشی سے واپسی پر بیٹے، بھتیجے اور ڈرائیور سمیت قتل 

  نوشہرہ ورکاں، مقدمہ قتل میں  ملوث ملزم پیشی سے واپسی پر بیٹے، بھتیجے اور ...

  



نوشہرہ ورکاں (نمائندہ خصوصی) قتل کی اندوہناک واردات، مخالفین کی فائرنگ سے باپ بیٹا بھتیجا اور ڈرائیور سمیت چار افراد قتل،تفصیلات کے مطابق نواحی گاؤں ڈیرہ شاہ جمال کا رہائشی محمد اعظم اپنے بیٹے توقیر،بھتیجے طاہر اور ڈرائیور سفیان ڈوگر کے ہمراہ کار پر تحصیل کچہری نوشہرہ ورکاں سے عبوری ضمانت کی پیشی کے بعد واپس گاؤں جا رہے تھے، پل نہر رڑوالہ پر موٹر سائیکل سوار وں نے اندھا دھند فائرنگ کر دی، کار میں سوار چاروں افراد موقع پر ہی دم توڑ گئے۔ مقامی پولیس ایس پی صدر وسیم ڈار، اے ایس پی کامونکی نوشیروان اور ایس ایچ او تھانہ نوشہرہ ورکاں فوری طور پر موقع پر پہنچے اور ضروری کارروائی کے بعد نعشوں کو پوسٹ مارٹم کے لئے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال منتقل کیا۔ پولیس نے مقتول اعظم کی بیوہ شاہین بی بی کی مدعیت میں ملزمان زاہد اقبال وغیرہ سمیت پانچ نامزد اور دو نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کر کے مزید تفتیش شروع کر دی ہے۔ واضح رہے کہ سال قبل مقتول اعظم گروپ کیخلاف اقبال گروپ کے یاسر کے قتل کا مقدمہ درج ہے۔ مقتول اعظم اقبال کا بھانجا تھا۔وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے نوشہرہ ورکاں میں 4 افراد کے قتل کے واقعے کا نوٹس لے لیا ہے، انھوں نے آر پی او گوجرانوالہ سے واقعے کی رپورٹ طلب کر لی اور واقعہ میں ملوث ملزمان کی جلد گرفتار ی کا حکم بھی جاری کیا۔وزیر اعلیٰ نے ہدایت کی کہ مقتولین کے لواحقین کو انصاف کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔ 

 چار افراد قتل

مزید : صفحہ آخر