طاقتور اور کمزور کیلئے  یکساں قانون ہونا چاہئے، سی سی پی او

  طاقتور اور کمزور کیلئے  یکساں قانون ہونا چاہئے، سی سی پی او

  



لاہور(کر ائم رپو رٹر)سی سی پی او لاہور ذوالفقار حمید نے کہا ہے کہ طاقتور اور کمزور کے لئے الگ الگ قانون ہرگز قابل قبول نہیں۔ سب کے ساتھ برابری، سٹیزن سروس اور اندرونی احتساب ترجیحات ہیں۔ شہریوں کے تحفظ اور محکمہ پولیس میں شفافیت پر سمجھوتہ نہیں ہوگا۔ سربراہ لاہور پولیس ذوالفقار حمید کا چارج سنبھالنے کے بعد تمام ایس پیز، ایس ڈی پی اوز اور ایس ایچ اوز کے مشترکہ اجلاس سے خطاب میں انہوں نے واضح کیا کہ زمینی حقائق کا اندازہ ہے، پولیس نفری کی کمی دور کریں گے۔ ایف آئی آرز کے اندراج سے گریز کا کوئی جواز نہیں۔ مقدمات کی تفتیش کی شرح بھی بہتر بنائیں گے۔ سی سی پی او لاہور نے پولیس لائنز قلعہ گجر سنگھ کے اپنے پہلے دورے میں یادگار شہدائے پولیس پر حاضری دی اور پھولوں کی چادر چڑھائی۔ پولیس کے دستے نے سلامی پیش کی۔ اس موقع پر نئے ڈی آئی جی آپریشنز لاہور رائے بابر سعید، ڈی آئی جی انویسٹی گیشن انعام وحید، سی ٹی او کیپٹن (ر) ملک لیاقت، ایس ایس پیز ذیشان اصغر، اطہر وحید اور محمد نوید بھی موجود تھے۔ سی سی پی او نے یادگار شہدا پر تاثراتی کتاب میں اپنے تاثرات بھی درج کئے۔۔

 پولیس افسروں کے اجلاس اور میڈیا سے گفتگو میں سی سی پی او لاہور ذوالفقار حمید نے کہا کہ میرے لئے سب سے کمزور سب سے طاقتور ہے۔ طاقتور کا ہاتھ زیادتی سے نہ روکنے والوں کو جوابدہ ہونا پڑے گا۔ انہوں نے کہا کہ مقدمات کے اندراج میں رکاوٹیں دور کرنے کے ساتھ ڈیٹیکشن بھی بہتر بنانا ضروری ہے۔ ایمانداری اور محنت سے کام کرنے والے پولیس افسر ہی میرے لئے قابل احترام ہوں گے۔ تھانوں میں شہریوں سے حسن سلوک کا نیا ماڈل متعارف کرائیں گے۔

مزید : علاقائی