غیرت کے نام پر نوجوان قتل

غیرت کے نام پر نوجوان قتل
غیرت کے نام پر نوجوان قتل

  



پشاور(ویب ڈیسک) نواحی علاقہ خزانہ کی حدود میں غیرت کے نام پر نوجوان کو قتل کرکے مسخ شدہ لاش کھیتوں میں پھینک دی گئی،ملزم فیروز نے مقتول ضیاء الرحمن کو غیرت کے نام پر قتل کرنے کا انکشاف کیا جس کے قبضہ سے آلہ قتل بھی برآمد کر لیا گیا، گرفتار ملزم نے شناخت چھپانے کی خاطر لاش کو مسخ کرنے کا بھی اعتراف کرلیا ہے جس سے دوران تفتیش مزید اہم انکشافات کی توقع کی جا رہی ہے۔

تھانہ خزانہ پولیس کو اطلاع ملی تھی کہ علاقہ گوہی قادر آباد کے اراضیات میں ایک ناقابل شناخت مسخ شدہ لاش پڑی ہے جس کو کسی نامعلوم ملزم نے ذبح کرکے قتل کیا ہے، جس پر پولیس نے لاش کو پوسٹ مارٹم رپورٹ کے لئے تحویل میں لیتے ہوئے نامعلوم ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی۔

ایکسپریس کے مطابق تفتیش کے دوران مقتول کی شناخت ضیاء الرحمان ولد باور خان سکنہ گوہی قادر آباد خزانہ کے نام سے ہوئی، جس کے بعد مقتول کے رشتے داروں سمیت قریبی روابط داروں کو بھی شامل تفتیش کیا گیا جس کے دوران اندھے قتل میں ملوث ملزم فیروز عرف پاکستان ولد پشم گل سکنہ قادر آباد کا سراغ لگا کر گرفتار کر لیا گیا جس نے ابتدائی تفتیش کے دوران اپنے جرم کا اعتراف بھی کرلیا ۔

مزید : جرم و انصاف /علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور