مسلمان بزنس مین سے شادی کرنے والی اداکارہ ارمیلا ماتونڈکر ہندو انتہا پسند تنظیم میں شامل ہوگئیں

مسلمان بزنس مین سے شادی کرنے والی اداکارہ ارمیلا ماتونڈکر ہندو انتہا پسند ...
مسلمان بزنس مین سے شادی کرنے والی اداکارہ ارمیلا ماتونڈکر ہندو انتہا پسند تنظیم میں شامل ہوگئیں
سورس:   Twitter

  

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بالی ووڈ اداکارہ ارمیلا ماتونڈکر نے ہندو انتہا پسند تنظیم شیو سینا میں شمولیت اختیار کرلی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق 2019 میں عام انتخابات سے قبل ارمیلا ماتونڈکر نے سیاست میں قدم رکھا اور سیکولر جماعت کانگریس میں شامل ہوئیں ۔ انہوں نے شمالی ممبئی کے حلقے سے الیکشن بھی لڑا لیکن ہار گئیں۔ مارچ 2019 میں کانگریس کا حصہ بننے والی ارمیلا نے ستمبر 2019 میں کانگریس کے کارکنوں پر تعاون نہ کرنے کا الزام لگاتے ہوئے پارٹی کو خیر باد کہہ دیا تھا۔

اب انہوں نے ایک سال سے بھی زائد عرصہ گزرجانے کے بعد ہندو انتہا پسند تنظیم شیو سینا میں شمولیت اختیار کی ہے۔ شیو سینا مہاراشٹر ریاست کی حکمران ہے اور اسی ریاست کا دارالحکومت ممبئی ہے جو بالی ووڈ کا گڑھ ہے۔

ارمیلا ماتونڈکر نے 2016 میں خود سے 9 سال چھوٹے کشمیری تاجر محسن اختر میر سے شادی کی تھی۔ محسن اختر میر، زویا اختر کی ہدایت کاری میں بننے والی فلم ’لک بائی چانس‘ میں کام کرچکے ہیں۔ اس میں وہ فرحان اختر کے ساتھ ماڈلنگ کرتے ہوئے دکھائی دیے تھے۔ گزشتہ برس جب ارمیلا ماتونڈکر الیکشن لڑ رہی تھیں تو بی جے پی کی جانب سے ان کے مسلمان شوہر کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

مزید :

تفریح -