8 سالہ بچی کو زیادتی کے بعد قتل کرنے والے ملزم کو سزائے موت سنا دی گئی 

8 سالہ بچی کو زیادتی کے بعد قتل کرنے والے ملزم کو سزائے موت سنا دی گئی 
8 سالہ بچی کو زیادتی کے بعد قتل کرنے والے ملزم کو سزائے موت سنا دی گئی 

  

نوشہرہ ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ نوشہرہ نے بچی سے زیادتی اور قتل کیس کا فیصلہ سنا دیا ، عدالت نے نامزد ملزم کو سزائے موت جبکہ ملزم کے ساتھی کو 25 سال قید با مشقت کا حکم سنایا ۔

ملزمان نے 18 جنوری 2020 کو نوشہرہ میں 8 سالہ بچی کو زیادتی کے بعد قتل کر دیا تھا ،عدالتی فیصلہ کے بعد دونوں مجرمان کو سینٹرل جیل مردان منتقل کر دیا گیا

خیال رہے کہ 8 سالہ بچی اپنی چھوٹی بہن کے ساتھ قرآن پاک پڑھ کر واپس آرہی تھی کہ راستے میں کھڑے 18 سالہ لڑکے نے اسے دکان سے  چیزیں دلانےکا لالچ دیکر ساتھ لے لیا جبکہ چھوٹی بہن کو واپس گھر بھیج دیا ،  دیر تک گھر واپس نہ پہنچنے پر  اہلخانہ نے تلاش شروع کی تو ملزم  بھی ساتھ شریک ہو گیا اور انہیں غلط نشاندہی کرتا رہا کہ میں نےبچی کو یہاں دیکھا تھا ، بعد ازاں چھوٹی بچی نے گھر والوں کو بتا دیا کہ یہی وہ لڑکا ہے جس کے ساتھ لا پتہ بچی گئی تھی  جس پر اہلخانہ نے ملزم کو پولیس کے حوالے کر دیا ۔ 

پولیس نے روایتی طریقے سے تفتیش کی  تو ملزم نے بچی کی لاش کی نشاندہی کردی اور ساتھ ہی بتایا کہ 35 سالہ ٹیکسی ڈرائیور بھی جرم میں شامل ہے جس پر پولیس نے دونوں کو گرفتار کر کے عدالت پیش کیا۔

مزید :

قومی -