سپاٹ فکسنگ : خالد لطیف پر 5سالہ پابندی برقرار، 10لاکھ روپے جرمانہ ختم

سپاٹ فکسنگ : خالد لطیف پر 5سالہ پابندی برقرار، 10لاکھ روپے جرمانہ ختم

لاہور(سپورٹس رپورٹر)پی سی بی کے ایڈجو ڈیکیٹر نے پاکستان سپر لیگ کے دوسرے سیزن میں سپاٹ فکسنگ کے الزام میں کرکٹر خالد لطیف پر 5سالہ پابندی کی سزا برقراررکھنے کا حکم سنا نے کے ساتھ ساتھ10لاکھ روپے جرمانہ ختم کردیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ سال پاکستان سپر لیگ ٹو کے ساتھ ہی سپاٹ فکسنگ سکینڈل کا طوفان اٹھا تھا جس میں شرجیل خان، خالد لطیف، شاہ زیب حسن، محمد عرفان اور ناصر جمشید کے نام سامنے آئے، پی سی بی نے کیس کی سماعت کیلئے 3رکنی اینٹی کرپشن ٹریبیونل تشکیل دیا جس نے خالد لطیف کو ڈھائی سال معطلی سمیت 5سال پابندی کی سزا سنائی۔ اوپنر نے معطلی جبکہ پی سی بی نے کم سزا کیخلاف اپیل دائر کی تھی، ایڈجوڈیکیٹر جسٹس(ر)فقیر محمد کھوکھر نے اس کیس پر فیصلہ سناتے ہوئے خالد لطیف پر 5 سال کی پابندی برقراررکھی تاہم جرمانہ معاف کردیا۔پی سی بی کے وکیل تفضل رضوی کے مطابق اوپنر کا کیرئیر ختم ہوجانے کے باعث ایڈجوڈیکیٹرنے جرمانے کی سزاختم کردی ہے۔

یاد رہے کہ اسی کیس میں سہولت کاری کے ملزم ناصر جمشید کو تحقیقات میں عدم تعاون پر ایک سال پابندی کی سزا سنائی جاچکی،بکی کے رابطے کی اطلاع نہ کرنے پر محمد عرفان 6ماہ کیلئے معطل ہوئے تھے، شاہ زیب حسن کا کیس ابھی چل رہا ہے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی