رجسٹرارلاہور ہائیکورٹ سے جوڈیشل الاؤنس کی رقم واپسی کیلئے درخواست دائر

رجسٹرارلاہور ہائیکورٹ سے جوڈیشل الاؤنس کی رقم واپسی کیلئے درخواست دائر

لاہور (نامہ نگار خصوصی )رجسٹرارلاہور ہائیکورٹ کی قبل از وقت ریٹائرمنٹ پر ان سے جوڈیشل الاؤنس کی مد میں وصول کی گئی رقم واپس لینے کیلئے درخواست دائر کر دی گئی ، اظہر صدیق ایڈووکیٹ کی وساطت سے عدالت عالیہ دائر کی گئی متفرق درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ جوڈیشل امور سر انجام دینے والا افسر رجسٹرار لاہور ہائیکورٹ تعینات نہیں ہو سکتا، اگر جوڈیشل امور انجام دینے والے افسر کو رجسٹرار کے عہدے پر تعینات کرنا مقصود ہے تو ہائیکورٹ رولز کے مطابق پنجاب پبلک سروس کمیشن کے ذریعے تعیناتی کی جا سکتی ہے، درخواست میں مزید موقف اختیار کیا گیا ہے کہ رجسٹرار لاہور ہائیکورٹ کے عہدے پر عدالت عالیہ کی اسٹیبلشمنٹ میں سے کسی افسر کو تعینات کیا جا سکتا ہے، ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سید خورشید انور رضوی کو ہائیکورٹ رولز کی خلاف ورزی کے تحت رجسٹرار کے عہدے پر تعینات کیا گیا اور اب انہوں نے قبل از وقت ریٹائرمنٹ بھی حاصل کر لی ہے، درخواست میں کہا گیا ہے کہ رجسٹرار خورشید انور رضوی کو غیر قانونی طور پر ماہانہ چار لاکھ روپے جوڈیشل الاؤنس بھی دیا جا رہا ہے، درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ رجسٹرار لاہور ہائیکورٹ کی قبل از وقت ریٹائرمنٹ اور تعیناتی کے نوٹیفیکیشن غیر قانونی قرار دے کر کالعدم کئے جائیں، درخواست میں مزید استدعا کی گئی ہے کہ رجسٹرار لاہور ہائیکورٹ کو 4 لاکھ روپے ماہانہ دیا جانے والا جوڈیشل الاؤنس اور دیگر سہولیات بھی واپس لی جائیں اور رجسٹرار لاہور ہائیکورٹ کے گھر کو کیمپ آفس ڈیکلئر کرنے کے اقدام کو بھی کالعدم کیا جائے ۔

رجسٹرار

مزید : علاقائی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...