حریت رہنماؤں کی صورہ ہسپتال سرینگر میں بھارتی فورسز کی فائرنگ کے زخمیوں سے عیادت

حریت رہنماؤں کی صورہ ہسپتال سرینگر میں بھارتی فورسز کی فائرنگ کے زخمیوں سے ...

سرینگر(کے پی آئی)مقبوضہ کشمیرمیں مسلم خواتین مرکزکے ایک وفد نے پارٹی سربراہ یاسمین راجہ کی قیادت میں صورہ ہسپتال سرینگرجا کر شوپیاں میں بھارتی فورسز کی بلا اشتعال فائرنگ سے زخمی ہونیوالی سمیرا،سائمہ اوردیگر نوجوانوں کی عیادت کی ۔ یاسمین راجہ نے بھارتی فورسز کے ہاتھوں زخمی ہونیوالی دونوں خواتین اور دیگر نوجوانوں کی جلد صحت یابی کیلئے دعا کی اور متاثرہ خاندان سے ہمدردی اور یکجہتی کا اظہار کیا ۔

انہوں نے کہاکہ ایک منصوبہ بند سازش کے تحت کشمیریوں کی نسل کشیُ کی جارہی ہے۔انہوں نے کہاکہ شوپیاں کے علاقے گنو پورہ میں بھارتی فورسز کی طرف سے پر امن اور نہتے مظاہرین پر اندھادھند فائرنگ کر کے نوجوانوں کو شہیداور گھروں میں گھس کر مکینوں پر فائرنگ سے دو خواتین سمیت متعددافراد کو زخمی کر دیا تھا ۔ انہوں نے اسے بھارتی ریاستی دہشت گردی کی بدترین مثال قراردیا۔ ادھرحریت رہنماء یاسین عطائی اور جموں وکشمیر مسلم لیگ کے وفود نے بھی صورہ ہسپتال جا کر سمیرا اور سائمہ کی عیادت کی اور انکی جلد صحت یابی کیلئے دعا کی ۔ انہوں نے متاثرہ خاندانوں سے ہمدردی اور یکجہتی کا اظہار بھی کیا۔ واضح رہے کہ ضلع شوپیان کے علاقے گنو پورہ میں بھارتی فورسز نے پرامن مظاہرین پر فائرنگ کرکے دو معصوم شہریوں جاوید احمد اور سہیل احمدکو شہید کردیاتھا جبکہ فائرنگ میں زخمی ہونیوالا ایک نوجوان رئیس احمد جو صورہ ہسپتال میں موت و حیات کی کشمکش میں مبتلا تھا بدھ کو ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔

مزید : عالمی منظر