کابل حملہ ، پاکستان مستندمعلومات پر ضرور اقدامات اٹھائے گا ، وزیر اعظم کی افغان وفد کو یقین دہانی

کابل حملہ ، پاکستان مستندمعلومات پر ضرور اقدامات اٹھائے گا ، وزیر اعظم کی ...

اسلام آباد(این این آئی)افغانستان کے وزیر داخلہ اویس احمد برمک اور این ڈی ایس کے سربراہ معصوم ستا نکزئی نے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی سربراہی میں ایک اعلیٰ سطحی وفد سے ایک ملاقات میں کابل میں طالبان کے حالیہ حملوں سے متعلق بات چیت کی ۔ نائب افغان سفیر زردشت شمس نے بتایا کہ ملاقات میں پاکستانی وزیر داخلہ اور اعلیٰ سیکیورٹی اہلکاروں نے شرکت کی ۔ انہوں نے کہا کہ افغان رہنماؤں کے دورے کا مقصد پاکستانی رہنماؤں کے ساتھ حالیہ حملوں سے متعلق گفتگو کرنی تھی جس کی ذمہ داری طالبان نے قبول کی تھی انہوں نے کہاکہ افغان رہنماؤں نے اس سلسلے میں فوری طور پر اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کیا ۔ انہوں نے کہاکہ پاکستانی وزیراعظم نے حملوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان کی جانب سے فراہم کی گئی معلومات پر ضروری اقدامات اٹھائے جائیں گے ۔ملاقات میں پاکستان کیلئے افغان صدر کے خصوصی نمائندے اور سفیر ڈاکٹر عمر زاخیل وال نے بھی شرکت کی۔ اس سے پہلے وزارت خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا تھا کہ افغان حکومت نے اعلیٰ سطحی وفد کے دورہ پاکستان کی درخواست کی تھی ۔انہوں نے اپنے ٹوئٹر پر کہا تھا کہ افغان وزیر اور انٹیلی جنس کے سربراہ افغان صدر کی جانب سے ایک پیغام اور دونوں ممالک کے درمیان تعاون سے متعلق مذاکرات چاہتے ہیں ۔ اس سے پہلے کابل میں کئی افغان اہلکاروں نے کہا کہ تھا کہ افغانستان کے وزیر داخلہ اور انٹیلی جنس سربراہ کابل میں طالبان کے حملوں سے متعلق شواہد پاکستانی رہنماؤں کے ساتھ شریک کرینگے ۔

وزیراعظم

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...