واجد ضیا 8 فروری کو اسحاق ڈار کے خلاف بطور گواہ طلب

واجد ضیا 8 فروری کو اسحاق ڈار کے خلاف بطور گواہ طلب

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک ) احتساب عدالت نے پاناما اسکینڈل کی تحقیقات کے لیے قائم ہونے والی جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیاء کو 8 فروری کو سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے خلاف اثاثہ جات ریفرنس میں بطور گواہ طلب کرلیا۔احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی عدالت میں اسحاق ڈار کے خلاف اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت ہوئی۔سماعت کے دوران سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) کی افسر سدرہ منصور نے اضافی دستاویزات جمع کرا دیں۔سدرہ منصور نے عدالت کو بتایا کہ اسحاق ڈار کی کمپنیوں سے متعلق 2 دستاویز رہ گئی تھیں، جو آج جمع کرائی گئی ہیں۔سماعت کے دوران نیب پراسیکیوٹر عمران شفیق نے کہا کہ عدالت جے آئی ٹی سربراہ واجد ضیاء کی طلبی کے سمن جاری کرے، تاہم جج محمد بشیر نے ریمارکس دیئے کہ 'عدالت سمن کیوں جاری کرے، واجد ضیاء استغاثہ کے گواہ ہیں، نیب انہیں خود پیش کرے ۔بعدازاں احتساب عدالت نے جے آئی ٹی سربراہ واجد ضیاء اور تفتیشی افسر کو 8 فروری کو طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت ملتوی کردی۔

واجد ضیا

مزید : صفحہ اول