خیبر پختونخوا کے بجلی پیداواری معاہدوں میں وفاقی حکومت رکاوٹیں کھڑی کر رہی ہے : عمران خان

خیبر پختونخوا کے بجلی پیداواری معاہدوں میں وفاقی حکومت رکاوٹیں کھڑی کر رہی ...

اسلام آباد (آئی این پی) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ خیبرپختونخوا حکومت نے 4ہزار میگاواٹ بجلی کی پیداوار کے معاہدے کئے ہوئے ہیں، جس پر وفاقی حکومت رکاوٹیں کھڑی کررہی ہے، حکومت کے بجلی درآمد کرنے سے اخراجات میں اضافہ ہوتا ہے، خیبرپختونخوا کی مثالی پولیس کے خلاف پلاننگ کے تحت مہم چلائی جا رہی ہے۔ میڈیا سے گزشتہ روز گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ 35ارب روپے کی سرمایہ کاری کے معاہدے پر دستخط ہو رہے ہیں، پہلی مرتبہ روس کی کمپنی نے خیبرپختونخوا میں سرمایہ کاری کی، شہباز شریف نے چیلنج کیا کہ اگر آپ نے ایک میگاواٹ بجلی بنائی ہے تو بتائیں ، خیبرپختونخواحکومت نے 4ہزار میگاواٹ کے معاہدے سائن کئے ہوئے ہیں، جس پر وفاقی حکومت روڑے اٹکا رہی ہے، 74میگاواٹ کی بجلی تیار ہے مگر وفاقی حکومت اسے نہیں لے رہی،بجلی سستی ہونے کے باعث ماضی میں پاکستان میں ترقی ہوئی، جب حکومت نے بجلی درآمد کرنا شروع کی اس کے بعد تباہی شروع ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ درآمدی بجلی سے اخراجات میں اضافہ ہوتا ہے اور قرضہ لینا پڑتا ہے، حکومت ایل این جی اور کوئلہ درآمد کر رہی ہے، جس میں یہ پیسہ بنا رہے ہیں جبکہ ہمارے معاہدوں کو یہ پاس نہیں کر رہے ، پاکستان میں آنے والے دنوں میں ایک اہم مسئلہ آلودگی ہوگا جو کوئلہ کے پاور پلانٹ سے پیدا ہوتی ہے۔ عمران خان نے کہا کہ تباہی کی وجہ یہ ہے کہ ملک میں بجلی اور گیس پر ٹیکس زیادہ لگے ہوئے ہیں، پانی سے بجلی کی پیداوار سب سے سستی ہے، دنیا میں کوئلہ کے پلانٹ بند کر رہے ہیں اور یہ کوئلہ کے پلانٹ لگا رہے ہیں۔

عمران خان

مزید : صفحہ اول