مقبوضہ کشمیر میں مسلم اکثریت کو اقلیت میں بدلنے کیخلاف آزاد کشمیر یونیورسٹی کے طلبہ کا احتجاج


مظفرآباد(آئی این پی)مقبوضہ ریاست جموں کشمیر کے صوبہ جموں میں مسلمانوں کی اکثریت کو اقلیت میں بدلنے کی بھارتی سازشوں کیخلا ف آزادکشمیر یونیورسٹی کے طلباء و طالبات سڑکوں پر نکل آئے، انٹرنیشنل فورم فار جسٹس اینڈ ہیومن رائٹس کے زیر اہتمام یونیورسٹی سے طلبہ و طالبات نے سی ایم ایچ چوک تک بھارت مخالف شدید احتجاجی مظاہرہ کیا ،بھارت مخالف اور آزادی کے حق میں نعرے، جموں کے مسلمانوں کیساتھ اظہار یکجہتی کیلئے ریلی نکالی گئی۔ تفصیلات کے مطابق انٹرنیشنل فورم فار جسٹس اینڈ ہیومن رائٹس جموں کشمیر کے زیر اہتمام مقبوضہ ریاست جموں کشمیر کے صوبہ جموں میں ہندوں انتہاء پسند تنظیموں بی جے پی ، آر ایس ایس ، بجرنگ دل ، راشٹریہ سیوک سنگھ کی جانب سے مسلمانوں پر تشدد املاک کو جلائے جانے، گھروں سے بے دخل کیئے جانے کیخلاف یونیوسٹی گیٹ سے ریلی کا انعقاد کیا گیا، ریلی سے خطاب کرتے ہوئے وائس چیئرمین فورم مشتاق السلام نے بھارتی انتہاء پسندی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ جموں کے مسلمانوں کے بنیادی انسانی حقوق پامال کیئے جارہے ہیں، بھارتی حکومت مسلم اکثریت کو اقلیت میں بدلنے کیلئے اپنی دہشتگرد تنظیموں کو استعمال کر کے مسلمانوں کو گھروں سے بے دخل کیا جارہا ہے، املاک کو جلایا جارہا ہے، تشدد کا نشانہ بنایا جارہاہے، اقوام متحدہ انسانی حقوق کی عالمی تنظیمیں خاموش تماشائی کا کردار ادا کررہی ہیں۔ عالمی برادری کو جموں کے مسلمانوں کیخلاف بھارتی سازشوں کا نوٹس لینا چاہیے۔

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...