پاکستان، یورپی یونین کا توانائی کے شعبہ کی ترقی کیلئے تعاون کو فروغ دینے کا اصولی فیصلہ

پاکستان، یورپی یونین کا توانائی کے شعبہ کی ترقی کیلئے تعاون کو فروغ دینے کا ...

اسلام آباد(صباح نیوز)پاکستان اور یورپی یونین نے پا کستان میں توانائی کے شعبہ کی ترقی اور اسکے تحفظ کیلیے تعاون اور باہمی روابط کو فروغ دینے کا اصولی فیصلہ کیا ہے، اس ضمن میں پاور ڈویژن نجی شعبہ کے ماہرین اور سرکاری حکام پر مشتمل وفد یورپی یونین بھیجے گا، جو کہ یورپی یونین کے تعاون سے توانائی کے تحفظ کو یقینی بنانے اور اسکی آگاہی کی فراہمی کے حوالے سے ورکشاپ میں شرکت کرے گا۔اس بات کا فیصلہ وفاقی وزیر برائے پاور ڈویژن سردار اویس احمد خان لغاری اورپاکستان میں متعین یورپی یونین کے سفیر جین فرینکوئس کاٹین کے درمیان اجلاس میں کیا گیا۔ اجلاس میں یہ بھی اتفاق کیا گیا کہ یورپی یونین کی جانب سے منعقد کی جانے والی ورکشاپ میں یورپی انویسٹمنٹ بینک کو بھی مدعو کیا جائے گا۔وفاقی وزیر سردار اویس احمد خان نے ورکشاپ پر یورپی یونین کے سفیر کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں توانائی کا شعبہ ترقی کر رہا ہے ملک میں وافر مقدار میں بجلی موجود ہے ۔ورکشاپ کی مدد سے صارفین کو بجلی کے استعمال کے بارے میں آگاہی گراہم ہوگی1 میگاواٹ بجلی پیدا کرنے سے زیادہ اہم ہے کہ 1 میگاواٹ بجلی کو بچایا جائے۔ وفاقی وزیر نے پاکستان میں اپنی نوعیت کے پہلے قابل تجدید توانائی کے انسٹیٹیوٹ کے قیام کی فوری تکمیل کو ممکن بنانے کیلیے یورپی انویسٹمنٹ بینک اور یورپی یونین میں سرمایہ کاروں کے تعاون کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ وفاقی وزیر نے جین فرینکوئس کاٹین کو پاکستان مین توانائی کیکے فروغ اور ترقی کیلیے یورپی یونین کے ساتھ روابط کو بہتر کرنے کیلیے سفارت خانے کی سطح پر ایک فوکل پرسن متعین کرنے کی تجویز دی جس پر یورپی یونین کے سفیر نے اتفاق کیا۔سردار اویس احمد لغاری نے کہا کہ بلوچستان میں 30 ہزار ٹیوب ویلوں کو شمسی توانائی پر منتقل کیا جارہا ہے۔ اس ضمن میںیورپی سفیر نے اپنی جانب سے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔اس موقع پریورپی یونین کے سفیر نے پاکستان کے ساتھ تعلقات کی بہتری اور تونائی کے شعبے کی ترقی کے لیے حکومت کے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں توانائی کے شعبے کی کارکردگی بہت بہتر ہے یورپی یونین خیبر پختونخوا میں قابل تجدید توانائی کے مختلف منصوبوں پر صوبائی حکومت کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے۔

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...