میونسپل کارپوریشن ملتان کے کے اجلاس کی جھلکیاں( محمد سعید مکول سے)


*اجلاس50منٹ تاخیر سے شروع ہوا۔ 11بجے کا وقت مقرر تھا۔*اجلاس کی(بقیہ نمبر28صفحہ12پر )

کارروائی کا آغاز تلاوت اور نعت خوانی سے کیا گیا۔
* موجودہ اجلاس3ماہ کے عرصہ کے بعد منعقد کیا گیا۔
* ڈپٹی میئر سعید انصاری نے اپنی کنوینئر کی دوسری ٹرم شروع ہونے کے بعد پہلے سیشن کی صدارت کی۔
* میونسپل کارپوریشن کے چیف آفیسر سردارنصیرعہدہ سنبھالنے کے بعد پہلی مرتبہ اجلاس میں آئے۔
* نعت خوانی کے دوران تالیاں بجانے پر ہاؤس کے ممبر اشرف تاج نے ساتھی ممبر افتخار جاوید کو شٹ اَپ کال دے دی۔
* گالم گلوچ اور مار پٹائی کے بعد ہاؤس کے ممبران اعجاز ڈوگر اور عمران سلہری آپس میں بغل گیر ہوگئے۔
* ممبرواصف بٹ نے سفارش پر ٹکٹ ملنے کے بعد مسلم لیگ سے بغاوت کرنے پر مہر جلیل خان بابر کو احسان فراموش قرار دے دیا۔سفارش کرنے والے منورر احسان قریشی کو بھی کھری کھری سنادی۔
* ہاؤس کے ممبر شیخ فیاض میئر کیخلاف عدم اعتماد لانے کیلئے ہال میں دستخط کراتے رہے۔
* 1سال میں پہلی مرتبہ اجلاس میں ممبران کی حاضری95فیصد رہی۔ہال کھچا کھچ بھرگیا۔اضافی کرسیاں لگوائی گئیں۔
* اجلاس میں ممبران کی تعداد زیادہ ہونے پر کھانا کم پڑگیا۔
* کثیر تعداد کی وجہ سے ہال میں گرمی ہونے کے بعد انتظامیہ نے پنکھے چلوادئیے۔
* میئر ملتان اجلاس میں40منٹ تاخیر سے آئے۔
* میئر کے خلاف شدید نعرے بازی کرنے والے ممبران کی سرکاری عملہ موبائل سے تصویریں بناتا رہا۔
* کنوینئر کی کرسی خالی ہونے کے بعد ممبر رانا سجاد اوراشرف تاج اس پر بیٹھنے کیلئے دھینگا مشتی کرتے رہے اور اکھٹے ہی دونوں بیٹھ گئے۔
* سیاسی کشیدگی پیدا ہونے کے بعد سیاسی مخالف میئر نوید ارائیں اور ڈپٹی میئر سعید انصاری ایک دوسرے کو گھورتے رہے اجلاس ختم ہونے تک آپس میں مصافحہ اور بات تک نہ کی۔
* اجلاس میں آمد پر اپوزیشن گروپ نے کنوینئر سعید انصاری کا ڈیسک بجاکر بھرپور استقبال کیا،نشستوں سے کھڑے ہوگئے،تالیاں بجاتے رہے۔
* میونسپل کونسل آفیسر نے ایجنڈے میں شامل کرانے کیلئے اپوزیشن کی قرارداد وصول کرنے سے انکار کردیا۔
* اپوزیشن ممبر جلیل خان بابر نے پانی کی بوتلیں نہ ملنے پر ٹھیکیدار سپلائی کے سرسے بوتلوں کا پورا کریٹ اٹھالیا۔
* ہال میں مخالفانہ نعرے لگانے کے بعد اپوزیشن کے ممبران جلیل خان بابر،اشرف تاج اور عدنان ڈوگر میئر کے پاس آکر خوش گپیاں کرتے رہے۔
* اجلاس میں چیئرمین شیخ ندیم اکبر اکیلاسابقہ ایم این اے طارق رشید زندہ باد کے نعرے لگاتا رہا۔
* گورنر پنجاب کا بھانجا یوسی چئیرمین اعجاز رجوانہ میئر کی مخالفت میں پیش پیش رہا۔
* اقلیتی ممبر شہزاد اور یوتھ ممبر رضوان توجہ حاصل کرنے کیلئے میئر کی طرف منہ کرکے انکی حمایت میں نعرے لگاتے رہے۔
* اپوزیشن لیڈر میئر کے سامنے مصالحانہ کردار جبکہ ہال کے باہر جاکر میڈیا کے سامنے انہیں کرپٹ قرار دیتے رہے۔دوغلی پالیسی سے ساتھیوں کو بھی حیران کردیا۔
* اجلاس ملتوی ہونے کے بعد میئر اور انکے ساتھی کھانا کھائے بغیر چلے گئے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...