خیبر ایجنسی‘ نان کسٹم پیڈ گاڑیوں کی پکڑ دھکڑ بند کی جائے


خیبرایجنسی (بیورورپورٹ)لنڈی کوتل پریس کلب میں خیبر سیاسی اتحاد کے رہنماؤں نے ہنگامی پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ اگر خوگہ خیل شنواری علاقے میں فورسز نے سرچ آپریشن، نان کسٹم پیڈ گاڑیوں کی پکڑ دھکڑ اور لوگوں کو شناختی پریڈ کے نام پر ہراساں کرنے کا سلسلہ فوری بند نہیں کیا تو منگل کے روز لنڈی کوتل بازار میں احتجاجی مظاہرہ کرینگے اور اگلے مرحلے میں پولیو مہم سے بائیکاٹ اور پاک افغان قومی شاہراہ مستقل بندکر کے انتظامیہ اور فورسز کا سوشل بائیکاٹ بھی کرینگے پریس کانفرنس میں خیبر سیاسی اتحاد کے رہنماؤں میں جے یو آئی ف کے مفتی اعجاز شنواری، جماعت اسلامی کے سید مقتدر شاہ آفریدی ، پیپلز پارٹی کے حضرت ولی آفریدی ، پی ٹی آئی کے ضرب اللہ شنواری ، اے این پی کے میناوال شنواری ، جسٹس اینڈ ڈیمو کریٹک پارٹی کے دولت شاہ آفریدی اور مسلم لیگ ن کے اسرار شنواری شامل تھے خیبر سیاسی اتحاد کے رہنماؤں نے کہا کہ بر داشت ختم ہو چکی، مذید ظلم، بے عزتی اور تذلیل بر داشت نہیں کرینگے انہوں نے اراکین پارلیمنٹ کی چالیس افراد کی سرچ آپریشن میں گرفتاری پر ان کی مجرمانہ خاموشی کی مذمت کی اور کہا کہ ارکان پارلیمنٹ کو آگے آکر علاقے اور عوام کی ترجمانی کرنی چاہئے اور اگر ایسا نہیں کر سکتے تو پھر ذاتی مفادات کے لئے علاقے میں آنا چھوڑ دیں مفتی اعجاز شنواری نے کہا کہ خوگہ خیل قبیلے کے جن چالیس افراد کو آرمی چھاؤنی پر مبینہ حملے کے بعد گرفتار کر لیا گیا ہے ان کے ساتھ مبینہ طور پر اچھا سلوک نہیں کیا جا رہا جس کی بھر پور مذمت کرتے ہیں انہوں نے لنڈی کوتل کے سترہ مغوی افراد کی بازیابی اور رہائی میں نا کامی پر ایف سی اور پولیٹیکل انتظامیہ کو ذمہ دارقرار دیتے ہوئے مذمت کی اور کہا کہ پولیٹیکل انتظامیہ کے آفسران خود بے بس ہیں اس لئے وہ کوئی کردار ادا نہیں کر سکتے سید مقتدر شاہ، حضر ولی ، اسرار ، مینا وال، دولت شاہ اور ضرب اللہ شنواری نے کہا کہ لنڈی کوتل میں سرچ آپریشن کی آڑ میں چادراور چاردیواری کی پامالی قابل مذمت ہے اور قوم کی برداشت ختم ہو چکی اور وہ غریب لوگوں سے روزگار چھیننے پر خاموش نہیں رہینگے اس لئے خیبر سیاسی اتحاد کے رہنماؤں نے منگل کو جلسہ کرنے ، شاہراہ بند کرنے، پولیو سے بائیکاٹ اور سوشل بائیکاٹ کے فیصلے کئے ہیں اور ساری قوم سے اپیل کر دی کہ ان کی آواز پر لبیک کہتے ہو ئے ان کے ساتھ میدان عمل میں آجائیں انہوں نے کہا کہ لنڈی کوتل کے عوام پرامن ہیں اور کوئی ان کو بندوق کے زور پر دبا نہیں سکتا انہوں نے اعلیٰ حکام گورنر خیبر پختون خوا اور کور کمانڈر پشاور سے صورتحال کا نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ گرفتار افراد کو فوری رہا کیا جائے ، نان کسٹم پیڈ گاڑیوں کو چھوڑ کر غریب لوگوں سے روزگار نہ چھینا جائے ، بلا جواز سرچ آپریشن اور شناختی پریڈ کا سلسلہ روک دیا جائے اور کسی کے گھر پر چھاپہ مار کر چادر اور چار دیواری کے تقدس کا خیال رکھا جائے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...