جائیداد کا کوئی تنازعہ نہیں الزامات بے بنیاد ہیں‘ بخت خان

جائیداد کا کوئی تنازعہ نہیں الزامات بے بنیاد ہیں‘ بخت خان

بخشالی( نمائندہ پاکستان)بادل خان آف سپینکئی پلوڈھیری کے سارے الزامات بے بنیاداور جھوٹ پر مبنی ہے ،ان کے ساتھ ہمارا جائیداد کا کوئی تنازعہ نہیں ،چیف جسٹس ،وزیر اعلی ،چیف سیکرٹری اور آجی پی سے غیر جانبدارانہ اور شفاف انکوائری کا مطالبہ تفصیلات کے مطابق سعد بخت خان ،پرویز خان ،مبارک زیب خان ساکنان سپینکئی نے دیگر ساتھیوں کے ہمراہ بخشالی پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ بادل خان ولد محمد قریش خان ہمارا بڑا بھائی ہے اور ان کے ساتھ ہمارا جائیداد کا کوئی تنازعہ نہیں ہے،بادل خان نے جو بھی الزمات عائد کئے ہیں وہ سب جھوٹ اور غلط بیانی پر مبنی ہے اسی طرح اس کے بیٹے ناصر ولد بادل کے زخمی ہو جانے سے ہمارا کوئی تعلق نہیں جبکہ سپینکئی پلوڈھیری میں ہمارا مائننگ لیز کا ایک باقاعدہ رجسٹر ڈ فرم چل رہا ہے مزید براں ناصر ولد بادل خان اور انور ولد سرور سکنہ پلوڈھیری عرصہ دراز سے ٹرک ڈرائیوروں سے جبراًپیسے لیتے تھے جس کی وجہ سے کسی نامعلوم ٹرک عملے کے ساتھ ان کی ہاتھ ا پائی کے نتیجے میں ناصر زخمی ہوا تھا جبکہ وقوعہ کے دن ہم اپنی چچی کے چہلم خیرات میں مہمانوں کے ساتھ بیٹے تھے اور ہمیں کافی تاخیر سے یہ خبر ملی نیز یہ بھی پتہ چلا کہ بادل خان اور اس کے بیٹے ناصر نے ہمار ے خلاف تھانے میں رپورٹ درج کرائی ہے نتیجتاً مقامی پولیس آگئی اور ہمیں گرفتار کرکے لے گئی حوالات میں رات گزارنے کے بعد اگلے دن ہمیں عدالت سے ضمانت پر رہائی ملی انہوں نے کہا کہ بادل خان کا بڑا بیٹا ناصرخان اور داماد انور ولد سرور سکنہ پلوڈھیری عرصہ دراز سے ناپسندیدہ سرگرمیوں میں ملوث ہیں جن کی بنا پر ناصر کو ولدین نے گھر سے نکال دیا تھا اور وہ کہیں اور رہائش پزیر تھا بعد میں رشتہ داروں اور علاقہ مشران کی کوششوں اسے دوبارہ گھر لایا گیا لیکن ناصر پھر بھی نہیں سدھرا اور بدستور اپنے کرتوتوں سے باز نہیں آیا انہوں نے چیف جسٹس آف پاکستان ،وزیر اعلیٰ خیبر پختون خوا ،چیف سیکرٹری اور آئی جی پی کے پی کے سے اپیل کی کہ اس واقع کی غیر جانبدارانہ اور شفاف تحقیقات کروائیں اور کمیشن مقرر کرکے ہمارے اور بڑے بھائی بادل خان اور اس کے بیٹے ناصر کے درمیان حقائق پر مبنی تصفیہ کرائیں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر