لیپہ آتشزدگی کے متاثرہ تاجروں سے کیاوعدہ پوراکیا جائے،مبشرمنیر

لیپہ آتشزدگی کے متاثرہ تاجروں سے کیاوعدہ پوراکیا جائے،مبشرمنیر

مظفرآباد(بیورورپورٹ) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنماء ایڈوکیٹ مبشر منیر اعوا ن نے کہا ہے کہ حکومت نے ایک سال قبل ہنگامی بنیادوں پر وادی لیپہ میں آتشزدگی سے متاثرہونے والے تاجروں کو دوکانیں بنا کر دینے اور قرضہ جات دینے کا جو وعدہ کیا تھا وہ جلد از جلد پورا کرے ورنہ پیپلزپارٹی متاثرین کے ساتھ ملکر احتجاجی تحریک چلانے پر مجبور ہو گی وادی لیپہ میں آتشزدگی کو ایک سال بیت گیا لیکن حکومت آزاد کشمیر نے متاثرین کے ساتھ امداد کے لیے جو وعدے ،کیے تھے کوئی بھی پورا نہیں کیا متاثرین آج بھی کسم پرسی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں ، گزشتہ سال لیپہ میں آتشزدگی میں میں پچاسی دوکانات،دس مکانات چھ گاڑیاں اور آٹھارہ موٹر سائیکل جل گئے تھے، ان خیلات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز آتشزدگی کو ایک سال پورا ہونے پر وادی لیپیہ سے آئے وہوئے متاثرین سے گفتگو کرتے ہوئے کی ان کا کہنا تھا کہ حکومت آزاد کشمیر نے آتشزدگی سے متاثرہ تاجروں ، مکینوں کو معاوضے اور قرضہ جات فراہمی کا وعدہ کیا تھا لیکن ایک سال گزر جانے کے باوجود بھی متاثرین کی کوئی مدد نہیں کی جاسکی، متاثرین آتشزدگی لیپہ آج بھی حکومتی امداد کے منتظر ہیں ، حکومت نے ہنگامی بنیادوں پر وادی لیپہ میں آتشزدگی سے متاثرہونے والے تاجروں کو دوکانیں بنا کر دینے اور قرضہ جات دینے کا جو وعدہ کیا تھا وہ جلد از جلد پورا کرے ورنہ پیپلزپارٹی متاثرین کے ساتھ ملکر احتجاجی تحریک چلانے پر مجبور ہو گی ، مبشر منیر کا کہنا تھا کہ انتظامیہ ایک سال کا عرصہ گزر جانے کے باوجود ابھی تک آتشزدگی کی وجوہات کا بھی پتہ نہیں لگا سکی،

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر