قاری نے غیر ملکی بچے سے زیادتی کا اعتراف کرلیا، مقدمہ درج

قاری نے غیر ملکی بچے سے زیادتی کا اعتراف کرلیا، مقدمہ درج
قاری نے غیر ملکی بچے سے زیادتی کا اعتراف کرلیا، مقدمہ درج

  

اسلام آباد (آ ن لائن)تھانہ کورال کے علاقے میں 12 سالہ غیر ملکی بچے سے بدفعلی کے الزام میں قاری اسلام کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا گیا۔ پولیس نے ملزم کو فرار کی کوشش کرانے میں دیگر تین ملزمان کو بھی حراست میں لے لیا۔

ذرائع نے بتایا کہ ملزم نے فلپائن سے پاکستان آنے والے 12 سالہ بچے کے ساتھ چاقو دکھا کر زیادتی کرنے کا اعتراف کرلیا ہے، بچہ جو کہ چند دن قبل اپنے والدین کے ساتھ فلپائن سے پاکستان چھٹیاں گزارنے آیا تھا، مدعی طاہر محمود نے تھانہ کورال پولیس کو بتایا کہ میرے بچے فلپائن نیشنل ہولڈر ہیں، میں اپنی بیوی اور بیٹے کے ہمراہ فلپائن سے اپنے ملک پاکستان چھٹیاں گزارنے آیا تھا اور اپنے 12 سالہ بیٹے جبران کو مولانا اسلم کے پاس قرآن پڑھنے کے لئے مقامی مسجد بھیجنے کا ارادہ کیا تاکہ وہ دین کا درس حاصل کرسکے تاہم 30-01-2018 بروز پیر میرے بیٹے نے مسجد جانے سے انکار کردیا، جب میں نے سختی کی تو میرے بیٹے نے بتایا کہ دو دن قبل قاری صاحب مجھے اپنے حجرے میں لے گئے اور چاقو دکھا کر مجھے زیادتی کا نشانہ بنایا جس پر میں اپنے پڑوسی کے ہمراہ مسجد گیا، جب شور ہوا تو ملزم موقع دیکھ کر فرار ہوگیا تاہم تھانہ کورال پولیس نے مدعی کی درخواست پر مقدمہ نمبری 52/18 درج کرکے ملزم کی تلاش شروع کردی۔

بعدازاں بدھ کی صبح ملزم کو کھنہ پل کے قریب ایک ہوٹل سے گرفتار کرلیا گیا ہے پولیس کی تفتیش میں ملزم کا کہنا تھا کہ میں اپنے کئے پر شرم سار ہوں۔ آن لائن کے مطابق ایس ایچ او کورال کا کہنا تھا کہ بچے کا ڈی این اے ٹیسٹ کرائیں گے اور ملزم کو فرار ہونے میں مدد کرنے والے مزید تین افراد کو بھی گرفتار کرلیا گیا ہے جن سے تحقیقات جاری ہیں۔

مزید : جرم و انصاف /علاقائی /اسلام آباد