سپریم کورٹ کو آئی جی سندھ کی تقرری پر بہت زیادہ تنقید کا سامنا کرنا پڑا : چیف جسٹس

سپریم کورٹ کو آئی جی سندھ کی تقرری پر بہت زیادہ تنقید کا سامنا کرنا پڑا : چیف ...
سپریم کورٹ کو آئی جی سندھ کی تقرری پر بہت زیادہ تنقید کا سامنا کرنا پڑا : چیف جسٹس

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ کو آئی جی سندھ کی تقرری پر بہت زیادہ تنقید کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

نقیب اللہ محسود قتل از خود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ اسلام آباد ایئر پورٹ تک پہنچنے کے دوران راو¿انوارکوکیوں نہیں روکاگیا، کیاراو¿انوار کو فرار ہونے کا موقع دیاگیا،ایئر پورٹ پر راؤ انوار کو ایف آئی اے نے روکا، اگروہ چلا جاتا تو کیا ہوتا؟۔چیف جسٹس نے آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ کو مخاطب کرکے کہا کہ آپ نے تو صرف خط بازی کے ذریعے کام چلادیا، پولیس اتنے اہم ملزم کی نگرانی کیوں نہیں کررہی تھی، چشم دیدگواہوں کے کہنے پر مقدمہ درج کیوں نہیں ہوا؟ آپ کومعلوم ہے عدالت پرآئی جی کی تقرری سے متعلق کتنی تنقید ہو رہی ہے؟ ۔ آپ کی تقرری پرہمیں بہت کچھ سنناپڑرہا ہے۔

نقیب اللہ قتل از خود نوٹس کیس،چیف جسٹس اور آئی جی سندھ میں دلچسپ مکالمہ

چیف جسٹس کے ریمارکس پر آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے کہا کہ عدالت کہے تو عہدہ چھوڑ دیتا ہوں۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیے عہدہ چھوڑنے سے کیا ہوگا؟ ہم چاہتے ہیں کہ آپ ہی اس کیس کو فالو کریں۔

مزید : Breaking News /اہم خبریں /قومی /علاقائی /اسلام آباد