راﺅ انوار عدالتی تحویل میں نہ آئے تو ان کی زندگی کو خطرہ ہوسکتا ہے: چیف جسٹس

راﺅ انوار عدالتی تحویل میں نہ آئے تو ان کی زندگی کو خطرہ ہوسکتا ہے: چیف جسٹس
راﺅ انوار عدالتی تحویل میں نہ آئے تو ان کی زندگی کو خطرہ ہوسکتا ہے: چیف جسٹس

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) نقیب اللہ محسود قتل کیس کے دوران چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے ریمارکس دیے ہیں کہ راﺅ انوار عدالتی تحویل میں نہ آئے تو ان کی زندگی کو خطرہ ہوسکتا ہے کیونکہ جن لوگوں کے کہنے پر کام ہو رہے ہیں وہ انہیں نہیں چھوڑیں گے۔

نقیب اللہ قتل از خود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیے راؤ انوار عدالتی حفاظت میں آجاؤ، اگرعدالتی تحویل میں نہ آئے تو زندگی کو خطرہ ہوسکتا ہے۔

نقیب اللہ محسود قتل کیس، آئی جی سندھ کو راﺅ انوار کی گرفتاری کیلئے 10 دن کی مہلت، سابق ایس ایس پی ملیر کا پیغام میڈیا پر نشر کرنے پر پابندی

انہوں نے کہا جن لوگوں کے کہنے پر کام ہو رہے ہیں انہیں نہیں چھوڑیں گے، مجھے نہیں معلوم راؤ انوار سے کون لوگ کام کرا رہے ہیں، یہ نہ ہو کہ انہیں کسی کی حفاظت نہ ملے۔

مزید : Breaking News /اہم خبریں /قومی /علاقائی /اسلام آباد