ڈی آئی خان میں لڑکی کی بے حرمتی کا کیس، مرکزی ملزم کی گرفتاری کیلئے پولیس کو 3 ہفتوں کی مہلت

ڈی آئی خان میں لڑکی کی بے حرمتی کا کیس، مرکزی ملزم کی گرفتاری کیلئے پولیس کو 3 ...
ڈی آئی خان میں لڑکی کی بے حرمتی کا کیس، مرکزی ملزم کی گرفتاری کیلئے پولیس کو 3 ہفتوں کی مہلت

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

پشاور (ڈیلی پاکستان آن لائن)ڈیرہ اسماعیل خان میں لڑکی کی بے حرمتی کے مرکزی ملزم کو خیبر پختونخوا کی مثالی پولیس تاحال گرفتار نہیں کرسکی، پشاور ہائیکورٹ نے مرکزی ملزم سجاول کی گرفتاری کیلئے پولیس کو مزید 3 ہفتوں کی مہلت دے دی۔

پشاور ہائیکورٹ میں ڈی آئی خان میں لڑکی کی بے حرمتی کے کیس کی سماعت کے دوران ڈی آئی جی ہیڈ کوارٹرز شیر عالم نے رپورٹ جمع کرادی۔ انہوں نے عدالت کو بتایا کہ واقعے میں ملوث 8 ملزمان گرفتارہیں جبکہ مرکزی ملزم سجاول کی گرفتاری کیلئے کوشش جاری ہے۔

متعلقہ خبر: ڈی آئی خان میں بے حرمتی کا نشانہ بننے والی لڑکی کی عدالت سے تحفظ کی درخواست

چیف جسٹس ہائیکورٹ نے استفسار کیا کہ مرکزی ملزم اب تک گرفتارکیوں نہیں ہوا،متاثرہ خاتون کی بنائی گئی ویڈیوز برآمد ہوئیں یا نہیں؟۔ ڈی آئی جی نے عدالت کو بتایا کہ 7 موبائل فونز کی رپورٹ مل گئی ہے جن میں ویڈیوز نہیں تھیں۔

ڈی آئی خان میں خاتون کی بے حرمتی کا واقعہ ، پشاور ہائی کورٹ نے فیصلہ سنا دیا

پشاور ہائی کورٹ نے مرکزی ملزم کی گرفتاری کیلئے 3 ہفتے کی مہلت دیتے ہوئے کیس کی مزید سماعت 22 فروری تک ملتوی کردی۔

ڈی آئی خان میں بے حرمتی کا شکار ہونیوالی لڑکی نے بھی خاموشی توڑ دی ، خیبرپختونخوا پولیس پر دباؤ ڈالنے کا الزام

مزید : اہم خبریں /قومی /جرم و انصاف /علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور /ڈیرہ اسماعیل خان