فحش فلموں کی ویب سائٹ وزٹ کرنے سے پہلے اب ایسا کام کرنا پڑے گا کہ لوگ گھبرا کر یہ فلمیں دیکھنا ہی چھوڑ دیں

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) فحش فلموں کی متعدد ویب سائٹس چلانے والی کمپنی نے اب نئے قوانین متعارف کروانے کا فیصلہ کر لیا ہے جس کے بعد صارفین کو اس کی ویب سائٹس پر جانے سے پہلے ایسا کام کرنا پڑے گا کہ لوگ گھبرا کر یہ شرمناک کام ہی چھوڑ دیں گے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق مائنڈ گیک (Mindgeek)نامی کمپنی نے ڈیجیٹل اکانومی ایکٹ 2018ءنافذ ہونے کے بعد فیصلہ کیا ہے کہ اب وہ اپنی ویب سائٹس پر آنے والے افراد سے پہلے ان کے نام، پاسپورٹ کی معلومات اور فون نمبر مانگے گی اور جو صارف یہ معلومات نہیں دے گا اسے سائٹس تک رسائی نہیں دی جائے گی۔
رپورٹ کے مطابق مائنڈ گیک نامی یہ کمپنی فحش فلموں کی کئی بڑی ویب سائٹس کی مالک ہے۔کمپنی کے اس فیصلے پر پرائیویسی کے حق کے لیے مہم چلانے والے کارکنوں کو تحفظات لاحق ہو گئے ہیں ۔ ان کارکنوں کا کہنا ہے کہ ”جس طرح ایشلے میڈیسن نامی ویب سائٹ ہیک ہونے کی وجہ سے اس کے کروڑوں صارفین کی معلومات افشاءہو گئیں تھیں، اسی طرح ان ویب سائٹس پر صارفین کی ذاتی معلومات بھی خطرے سے دوچار رہیں گی۔ایک فحش ویب سائٹ کی مالک پینڈورا بلیک نے بھی اس حوالے سے خدشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ”جو صارف ایک بار مائنڈ گیک پراپنی ذاتی معلومات دے کر لاگ ان ہو جائے گا اس کے بعد یہ کمپنی اس صارف کی تمام ویب براﺅزنگ ہسٹری محفوظ کرتی رہے گی۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...