سائنسدانوں نے ماں بننے کے لئے خواتین کو بہترین عمر بتادی، سب اندازے غلط ثابت ہوگئے

اوٹاوا(مانیٹرنگ ڈیسک) خواتین کے ماں بننے کے لیے کون سی عمر بہترین ہوتی ہے؟ اس کا جواب عموماً نوجوانی کی عمر قرار دیا جاتا ہے لیکن اب کینیڈا کے سائنسدانوں نے نئی تحقیق میں ایسا انکشاف کر دیا ہے کہ تمام اندازے غلط ثابت ہو گئے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے تحقیقاتی نتائج میں اس عام تاثر کے برعکس بتایا ہے کہ ”بچے کو جنم دینے کی بہترین عمر 30سے 34سال کے درمیان عرصہ ہے۔ اس عمر کی ماں کے ہاں پیدا ہونے والے بچوں میں قبل از وقت پیدائش کا امکان نہ ہونے کے برابر ہوتا ہے۔“
ماہرین کا کہنا تھا کہ ”جو خواتین 40سال یا اس سے زائد عمر کی ہوں ان میں قبل از وقت بچہ پیدا ہونے کے امکانات سب سے زیادہ ہوتے ہیں۔دوسرے نمبر پر ان لڑکیوں میں قبل ازوقت بچے کی پیدائش کا امکان ہوتا ہے جو عمر کی 20کی دہائی کے ابتدائی سالوں میں ہوں۔“رپورٹ کے مطابق اس تحقیق میں کیوبک کے 32ہسپتالوں سے 2008ءاور 2011کے درمیان ہونے والی زچگیوں کا ریکارڈ حاصل کرکے ان کا تجزیہ کیا۔ تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر فلورنٹ فچز کا کہنا تھا کہ ”ہم نے اس عرصے کے دوران ماں بننے والی ان ہزاروں خواتین کی عمریں 20سے 24، 25سے 29،30سے 34، 35سے 39اور 40سے زائد کی درجہ بندی میں تقسیم کیں۔ ان میں جس گروپ کی خواتین کے ہاں سب سے کم قبل از وقت پیدائش ہوئی تھی وہ 30سے 34سال عمر کا گروپ تھا۔“

مزید : تعلیم و صحت

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...