میر ہزار بجارانی اور ان کی اہلیہ کی ہلاکت کا معاملہ، جب فائرنگ کی آواز آئی تو سب سے پہلے کمرے میں کون داخل ہو اتھا ؟ کوئی ملازم نہیں بلکہ ۔۔۔ملازمین نے اپنے بیانات ریکارڈ کروادیئے

میر ہزار بجارانی اور ان کی اہلیہ کی ہلاکت کا معاملہ، جب فائرنگ کی آواز آئی تو ...
میر ہزار بجارانی اور ان کی اہلیہ کی ہلاکت کا معاملہ، جب فائرنگ کی آواز آئی تو سب سے پہلے کمرے میں کون داخل ہو اتھا ؟ کوئی ملازم نہیں بلکہ ۔۔۔ملازمین نے اپنے بیانات ریکارڈ کروادیئے

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن ) ڈیفنس کراچی کے علاقے میں گھر سے صوبائی وزیر اور پیپلز پارٹی کے رہنما میر ہزار خان بجارانی اور ان کی اہلیہ کی لاشیں ملی ہیںجس کی تحقیقات کا آغاز کر دیا گیاہے اور پولیس نے پانچ افراد کو حراست میں لے کر بیانات قلمبند کر لیئے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق پولیس کی جانب سے حراست میں لیے جانےوالوں میں میر ہزار خان بجارانی کا باورچی،ڈرائیور اور اس کی اہلیہ سمیت سیکیورٹی پر تعینات دو پولیس اہلکار شامل ہیں،ملازمین نےاپنےبیانات نےمیں کہاہے کہ فائرنگ کی اطلاع میر ہزار بجارانی کے بیٹےنے دی تھی اورکمرے میں بھی سب سےپہلےوہی داخل ہوئےتھے،فائرنگ کی آوازپربھاگ کر اوپر کی منزل پر گئےتھے ،پولیس نے گھر میں لگے تمام سی سی ٹی وی کیمروں کی فوٹیج بھی حاصل کر لی ہے ۔واضح رہے کہ میر ہزار بجارانی کا ڈرائیور سرکاری ملازم ہے اور اس کی اہلیہ بھی اسی بنگلے میں رہتی ہے۔

مزید : قومی