’مجھے یقین نہیں آرہا مجھے اس شخص سے پیار ہوگیا تھا‘ آدمی کی ایسی شرمناک ترین حرکت کہ اس کی نوجوان بیگم کو زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا لگ گیا، کبھی تصور بھی نہ کرسکتی تھی کہ اس کا شوہر۔۔۔

’مجھے یقین نہیں آرہا مجھے اس شخص سے پیار ہوگیا تھا‘ آدمی کی ایسی شرمناک ترین ...
’مجھے یقین نہیں آرہا مجھے اس شخص سے پیار ہوگیا تھا‘ آدمی کی ایسی شرمناک ترین حرکت کہ اس کی نوجوان بیگم کو زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا لگ گیا، کبھی تصور بھی نہ کرسکتی تھی کہ اس کا شوہر۔۔۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نئی دلی(نیوز ڈیسک)بھارت سے جنسی جرائم کی خبریں تو روز آتی ہیں لیکن حیوانیت کی ایسی لرزہ خیز داستان آپ نے کبھی نہیں سنی ہو گی۔ دارلحکومت دلی میں ایک شیطان صفت نوجوان نے اپنی آٹھ ماہ کی کزن کو درندگی کا نشانہ بنا ڈالا ہے۔ اس بدبخت کے ناقابل یقین جرم نے جہاں سارے بھارت کو ہلا کر رکھ دیا ہے وہیں اس کی جواں سال اہلیہ بھی اپنی بدنصیبی پر نوحہ کناں ہے۔ بائیس سالہ ہیما کوہلی کا کہنا ہے کہ وہ اس بات پر یقین نہیں کر پا رہی کہ اس درندے سے اسے پیار ہو گیا تھا، ایک ایسا درندہ جس کا اپنا 9 ماہ کا بچہ ہے لیکن اس نے اپنی ہی 8 سالہ کزن کو ہوس کا نشانہ بنا ڈالا۔

دی مرر کے مطابق ہیما نے اپنے خاوند کے وحشیانہ جرم پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا ”مجھے یقین نہیں آرہا کہ اس نے ایسا کیا ہے۔ میرے لئے یہ یقین کرنا بھی مشکل ہے کہ میں ایسے درندے سے محبت کررہی تھی۔ اگر اس پر جرم ثابت ہوتا ہے تو میں اسے اپنی آنکھوں کے سامنے پھانسی پر لٹکتا دیکھنا چاہتی ہوں۔“

مقامی میڈیا کے مطابق شیرخوار بچی کو ظلم کا نشانہ بنانے والے 26 سالہ بدبخت ملزم کا نام سورج کوہلی ہے۔ اسے 29جنوری کے روز اس بھیانک جرم کے الزام میں دہلی کے شمال مغربی علاقے سے گرفتار کیا گیا۔ بچی گھر پر اپنی دو سالہ بہن کے ساتھ موجود تھی جبکہ اس کے والدین محنت مزدوری کے لئے گھر سے باہر تھے۔ بدبخت شخص بچی کو یہ کہہ کر اپنے بیڈروم میں لے گیا کہ وہ اس کے ساتھ کھیلنا چاہتا ہے۔ جب بچی کی والدہ گھر آئی تو اسے خون میں لت پت اور بری طرح روتے ہوئے پایا۔ بچی کو فوری طورپر مقامی ہسپتال لیجایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اس کے ساتھ زیادتی کی تصدیق کردی۔ ملزم پولیس کی حراست میں ہے اور اس کے خلاف قانونی کاروائی جاری ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس