سعودی عرب سے غیر ملکیوں کے بارے میں ایسی خبر آگئی کہ جان کر پاکستانی حکومت کی پریشانی کی کوئی انتہا نہ رہے گی، نیا مسئلہ کھڑا ہوگیا کیونکہ۔۔۔

سعودی عرب سے غیر ملکیوں کے بارے میں ایسی خبر آگئی کہ جان کر پاکستانی حکومت کی ...

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) ترقی پزیر ممالک کی معیشت کے لئے ایک بڑا سہارا بیرون ملک کام کرنے والے شہریوں کی بھیجی گئی رقوم ہوتی ہیں۔ پاکستان کے لئے بھی اس کے بیرون ملک شہریوں کی بھیجی گئی رقوم بہت اہمیت رکھتی ہیں۔ ان میں سے بہت بڑا حصہ سعودی عرب سے آتا ہے لیکن بدقسمتی سے گزشتہ دو سال کے دوران یہ رقم ہر گزرتے دن کے ساتھ کم ہوتی جا رہی ہے۔ سعودی حکام کی جانب سے جاری کئے گئے تازہ ترین اعداد و شمار ظاہر کرتے ہیں کہ اب یہ مسئلہ مزید سنگین ہو رہا ہے کیونکہ سعودی عرب سے باہر بھیجی جانے والی رقوم میں غیر معمولی کمی آ رہی ہے۔

سعودی عریبین مانیٹری اتھارٹی کے اعداد و شمار بتاتے ہیں کہ مملکت میں مقیم غیر ملکیوں کی جانب سے گزشتہ سال اپنے ملکوں کو بھیجی گئی رقوم میں اس سے پہلے سال کی نسبت 6.74 کی کمی ہوئی ہے۔ الحیات اخبار نے مانیٹری اتھارٹی کے حوالے سے بتایا ہے کہ گزشتہ پانچ سال کے دوران غیر ملکیوں نے مجموعی طور پر 752 ارب ریال سعودی عرب سے باہر بھیجے ہیں۔ غیر ملکیوں کی جانب سے رقوم کا سب سے بڑا حجم 2015ءمیں بھیجا گیا جو 157 ارب ریال تھا جبکہ سب سے کم رقوم 2017ءمیں بھیجی گئیں جو کہ تقریباً 141.6 ارب ریال تھیں۔ اس کے برعکس 2016ءمیں غیر ملکیوں نے تقریباً 152 ارب ریال مملکت سے باہر بھیجے۔ معاشی تجزیہ کار یہ خدشہ بھی ظاہر کر رہے ہیں کہ آنے والے دنوں میں سعودی عرب سے آنے والی رقوم کے حجم میں مزید کمی آئے گی۔

مزید : عرب دنیا

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...