کچھ لوگوں کے ناخن اس طرح کے کیوں ہوجاتے ہیں؟ یہ کیا چیز ہوسکتی ہے اور اس سے نجات کیسے ممکن ہے؟ جانئے وہ بات جو آپ کو ضرور معلوم ہونی چاہیے

کچھ لوگوں کے ناخن اس طرح کے کیوں ہوجاتے ہیں؟ یہ کیا چیز ہوسکتی ہے اور اس سے ...
کچھ لوگوں کے ناخن اس طرح کے کیوں ہوجاتے ہیں؟ یہ کیا چیز ہوسکتی ہے اور اس سے نجات کیسے ممکن ہے؟ جانئے وہ بات جو آپ کو ضرور معلوم ہونی چاہیے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

برمنگھم(مانیٹرنگ ڈیسک) ناخنوں کے مسائل یوں تو بہت طرح کے ہو سکتے ہیں لیکن ناخن کی بالائی تہہ کا زردی مائل موٹے چھلکے کی صورت اختیار کرجانا ایک عام پایا جانے والا مسئلہ ہے۔ یہ ناخن دیکھنے میں بہت برا لگتا ہے اور اکثر لوگ اس کی وجہ معلوم نا ہونے کی بناءپر پریشانی میں مبتلا رہتے ہیں۔ ویب سائٹ مینز ہیلتھ کی ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ یہ مسئلہ ناخن کے انفیکشن سے پیدا ہوتا ہے اور ناخن کی بالائی پرت کے نیچے نظر آنے والا زردی مائل مادہ دراصل فائبرس پروٹین کیراٹین کی ٹوٹ پھوٹ سے پیدا ہوتا ہے۔ اس پروٹین میں ٹوٹ پھوٹ عموماً پھپھوندی کے انفیکشن کی وجہ سے ہوتی ہے ۔ اس ضمن میں سب سے اہم بات یہ ہے کہ اگر اس انفیکشن کا علاج نہ کیا جائے تو یہ مزید پھیل سکتا ہے۔

میڈیکل سائنس کی زبان میں ناخن کی اس بیماری کو Onychomycosis کہا جاتا ہے۔ انفیکشن کی وجہ سے زردی مائل مادہ عموماً ناخن کی بالائی باریک پرت کے نیچے جمع ہوتا ہے۔ اس فاضل مادے کے جمع ہونے کی وجہ سے ناخن کی بالائی تہہ اپنی جگہ سے قدرے اوپر اٹھ جاتی ہے اور کمزور ہو جانے کے باعث اس کی ٹوٹ پھوٹ کا خطرہ بھی بڑھ جاتا ہے۔

ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ اس انفیکشن سے بچنے کے لئے ناخنوں کی صفائی کا خیال رکھنا بہت ضروری ہے۔ خصوصاً اگر آپ کے پاﺅں گرد و غبار یا آلودہ پانی سے متاثر ہوتے ہیں تو فوری طور پر انہیں صابن سے اچھی طرح دھو کر صاف کریں۔ نہانے کے بعد اپنے پیروں اور خصوصاً ناخنوں کو اچھی طرح خشک کریں تاکہ ان میں نمی باقی نہ رہے۔ یہ نمی انفیکشن کا باعث بنتی ہے۔ اپنے ناخنوں کو زیادہ بڑھنے نہ دیں کیونکہ بڑھے ہوئے ناخنوں میں بھی میل اور جراثیم جمع ہونے سے انفیکشن پید اہوجاتا ہے۔ اگر بدقسمتی سے آپ کے ناخن میں یہ مسئلہ پید اہوجائے تو ماہر جلد سے رابطہ کریں۔ بروقت علاج شروع کردیا جائے تو اس بیماری پر بآسانی قابو پایا جاسکتاہے۔

مزید : تعلیم و صحت