فالج اور دماغ کا علاج بہت آسان ہو چکا ہے،طبی ماہرین

فالج اور دماغ کا علاج بہت آسان ہو چکا ہے،طبی ماہرین

  



لاہور(جنرل رپورٹر)پاکستان میں میڈیکل کے شعبے میں بڑا بریک تھرو سامنے آ گیا لاہور جنرل ہسپتال میں پہلی مرتبہ کیتھیٹر کی بنیاد پر سٹروک کے علاج کا آغاز شروع ہے جس کے لئے ڈاکٹر عمیر رشید چوہدری کی سربراہی میں نیورو انٹر ونیشنل ریڈیالوجسٹ کی خصوصی ٹیم نے حصہ لیا جبکہ ڈاکٹر ابوبکر صدیق،میجر ڈاکٹر سہیل اختر اور ڈاکٹر صائمہ احمد نے ان کی معاونت کی۔اس موقع پر نامور طبی ماہرین نے فالج کے مریضوں کے براہ راست پروسیجر ز نوجوان ڈاکٹروں کو دکھائے۔ پاکستان کے علاوہ مصر سے ڈاکٹر اْسامہ یاسین منصور،ملائیشیا سے ڈاکٹر احمد صوبری اورپروفیسر ڈاکٹر ازامن بن عبدالرحیم، تھائی لینڈ سے ڈاکٹر این چالے اور عالمی شہرت کے حامل ڈاکٹر حسیب منظور اور ڈاکٹر حامد محمود بھی اس موقع پر موجود تھے۔

پروفیسر ڈاکٹر عمیر رشید چوہدری کی قیادت میں ہونے والی پریس کانفرنس میں بتایا گیا کہ پاکستان میں فالج اور دماغ کے امراض میں بڑی حد تک ترقی ہو چکی ہے۔فالج ہونے کی صورت میں پہلے6سے24گھنٹے انتہائی اہمیت کے حامل ہیں جن کے دوران بذریعہ انجیوگرافی خون کے لوتھرے کو دماغ سے نکال دیا جاتا ہے اس طرح بروقت طبی امداد کی فراہمی سے مریض بہت سے پیچیدگیوں سے محفوظ رہتا ہے جبکہ اب تک اس سینٹر میں 70ایسے مریضوں کا کامیابی کے ساتھ بر وقت علاج کیا جا چکا ہے

مزید : میٹروپولیٹن 1