وہاڑی‘ وکلا‘ جوڈیشری عملہ آمنے سامنے‘ ضلع کچہری میں کشیدگی

  وہاڑی‘ وکلا‘ جوڈیشری عملہ آمنے سامنے‘ ضلع کچہری میں کشیدگی

  



وہاڑی(بیورورپورٹ+نمائندہ خصوصی) ڈسٹرکٹ بار ممبراورسکولسکیورٹی گارڈ کے درمیان ہونیوالا تنازعہ نے جوڈیشری عملہ کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا وکلاء کی (بقیہ نمبر46صفحہ7پر)

ہڑتال تیسرے روز بھی جاری,جوڈیشری عملہ اور وکلاء ایک دوسرے کے مقابلے پراتر آئے دونوں گروہوں کی ایک دوسرے کے خلاف شدید نعرے بازی واقعات کے مطابق ڈسٹرکٹ بار ممبر اور سکول سیکیورٹی گارڈ کے درمیان ہونیوالا تنازعہ نے جوڈیشری عملہ کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا وکلاء کی ہڑتال تیسرے روز بھی جاری رہی اورجوڈیشری عملہ اور وکلاء ایک دوسرے کے مقابلہ پراتر آئے دونوں گروپوں نے ایک دوسرے کے خلاف نعرے بازی کی جبکہ ذرائع کے مطابق سیشن جج نے وکلاء کو ہٹانے کیلئے پولیس طلب کی تو پولیس نے وکلاء کے معاملہ میں آنے سے انکار دیا جبکہ وکلاء نے احاطہ عدالت سمیت کچہری سے بھی پولیس اہلکاروں کو باہر نکال دیا وکلاء نے احاطہ عدالت اور بخشی خانہ کے دروازے بھی بند کردیئے بار ممبر اور سکول سیکیورٹی گارڈز کے درمیان ہونیوالے تنازع پر پولیس اور ضلعی انتظامیہ تاحال خاموش ہے انتظامیہ اور وکلاء کے معاملات حل نہ ہونے پرکسی بھی وقت کوئی بڑا حادثہ ہو سکتا ہے جبکہ احتجاجی وکلاء میں صدر میاں شہزاد انجم مترو نے نائب صدر محمد امین صابر بھٹی، سابق صدور چوہدری شکیل احمد تارڑ، مہر شیر بہادر لک،خضر حیات تارڑ، عبدالخالق بھٹی،سابق جنرل سیکرٹری علی اعجاز چوہدری، سہیل بھٹی، عاقب بھٹی، علی طور،محمد طیب چوہدری، چوہدری شعبان، راؤ تصور، احسن چوہدری، مہر کاشف،رستم حیات،ملک غلام عباس لنگڑیال،مہر اشفاق وصلی،حسان منورقریشی،ارسلان فدا مترو سمیت کثیر تعدا میں وکلاء شامل ہیں۔

کشیدگی

مزید : ملتان صفحہ آخر