ڈیرہ‘ بل کی عدم ادائیگی پر سرکاری دفاتر‘ رہائش گاہوں کے پانی کنکشن منقطع

  ڈیرہ‘ بل کی عدم ادائیگی پر سرکاری دفاتر‘ رہائش گاہوں کے پانی کنکشن منقطع

  



ڈیرہ غازی خان (ڈسٹرکٹ بیورور پورٹ) میٹروپولیٹن کارپوریشن ڈیرہ غازی خان نے بل اور دیگر واجبات کی عدم ادائیگی پر پانی کے کنکشن منقطع کرنے کا سلسلہ شروع کردیا ہے جس کا آغاز کمشنر آفس اور رہائش گاہ سے کیا گیا۔ڈی آئی جی،ڈپٹی کمشنر کے دفاتر اور رہائش گاہوں کے ساتھ سرکٹ ہاؤس کے کنکشن بھی کاٹ دئیے گئے۔ چیف آفیسر میٹرو پولیٹن کارپوریشن(بقیہ نمبر45صفحہ12پر)

اقبال فرید نے کہا کہ واٹر سپلائی کے آٹھ کروڑ روپے کے واجبات واجب الادا ہیں جن میں سے اڑھائی کروڑ روپے سرکاری دفاتر اور رہائش گاہوں کے ذمہ ہیں۔کمشنر آفس اور ہاؤس کے ذمہ 14000 روپے واجب الادا تھے جس پر سب سے پہلے ان کے کنکشن کاٹے گئے ہیں،ڈی آئی جی 14200روپے،کمانڈنٹ بلوچ لیوی94900روپے،بی ایم پی آفس110058روپے،سرکٹ ہاؤس 32200 روپے،تحصیلدار 112294 روپے،پولیس ریسٹ ہاؤس114048 روپے سمیت 18 سرکاری دفاتر اور رہائش گاہوں کے ذمہ لاکھوں روپے واجب الادا ہیں۔انہوں نے کہا کہ نادہندگان کے پانی کے کنکشن کاٹنے کا سلسلہ بلا امتیاز جاری رہے گا اور واجبات کی ادائیگی تک کنکشن بحال نہیں کئے جائیں گے۔چیف افیسر نے کہا کہ ہر چھوٹے بڑے افسر کے پانی کا کنکشن کاٹ دیا جائیگا۔انہوں نے بتایا کہ سروے اور کنکشن کاٹنے کیلئے بارہ ٹیمیں تشکیل دے دی ہیں۔چیف آفیسر اقبال فرید نے واضح کیا کہ جب کارپوریشن کی ٹیم اپنے ایڈمنسٹریٹر و کمشنر کے دفتر اور گھر کا کنکشن کاٹ سکتی ہے تو سمجھیں کہ وہ کسی کا بھی پانی کا کنکشن کاٹنے سے گریز نہیں کرے گے اس لئے ایسے صارفین جنہوں نے اپنے گھروں اور دفاتر کے بل ادا نہیں کئے وہ فوری طور پر سرکاری واجبات کی ادائیگی کو یقینی بنائیں بصورت دیگر انکے واٹر سپلائی کے کنکشن کاٹ دئیے جائیں گے۔غیر قانونی کنکشن فوری ریگولر کرائے جائیں اور نئے کنکشن کیلئے درخواست دی جائے کارپوریشن کی ٹیم آکر فوری کنکشن لگادے گی۔واضح رہے کہ کمشنر نسیم صادق نے چند روز قبل کارپوریشن کا اجلاس طلب کرکے نادہندگان کے خلاف بلاامتیاز آپریشن کے احکامات جاری کئے تھے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر